پوپ فرانسیس کا امریکا ، یورپ پر جنگ زدہ علاقوں میں اسلحہ فروخت کرنے کا الزام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاپائے روم پوپ فرانسیس نے امریکا اور یورپ پر جنگ زدہ علاقوں میں اسلحہ فروخت کرنے کا الزام عاید کیا ہے اور کہا ہے کہ اس سے تنازعات کو مہمیز مل رہی ہے اور شام ، یمن اور افغانستان میں لوگ اس اسلحے کا ہدف بن رہے ہیں۔

انھوں نے ہفتے کے روز اٹلی کے شہر میلان میں سان کارلو انسٹی ٹیوٹ میں اساتذہ اور طلبہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا :’’دنیا بھر میں اس قدر زیادہ جنگیں اس وجہ سے ہیں کہ امیر یورپ اور امریکا اپنا اسلحہ اور ہتھیار فروخت کررہے ہیں ۔یہ اسلحہ اور ہتھیار بچّوں اور لوگوں کو قتل کررہے ہیں‘‘۔

رومن کیتھولک کے روحانی پیشوا نے کہا کہ’’ اگر یہ ہتھیار نہیں ہوتے تو پھر شام ، یمن اور افغانستان میں جنگیں بھی نہیں ہوتیں‘‘۔

ان کا کہنا تھا کہ ’’ جو ملک اسلحہ بناتا اور فروخت کرتا ہے تووہی ہر بچّے کی موت اور ہر خاندان کی تباہی کا بھی ذمے دار ہے۔یہ ہم ہی ہیں جو ایک فرق قائم کرتے ہیں‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں