.

امریکا نے سپاہِ پاسداران انقلاب ایران کو غیرملکی دہشت گرد تنظیم قرار دے دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا نے ایران کی سپاہِ پاسداران انقلاب (آئی آر جی سی) کو غیرملکی دہشت گرد تنظیم قرار دے دیا ہے۔اس نے یہ پہلا موقع ہے کہ کسی دوسرے ملک کی فوج کو ایک دہشت گرد گروپ قرار دیا ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سوموا ر کو پاسداران انقلاب کو دہشت گرد تنظیم قرار دینے کا ’’ منفرد اور بے مثل‘‘ اقدام کیا ہے اور کہا ہے :’’ یہ دراصل اس حقیقت کا بھی اعتراف ہے کہ ایران نہ صرف دہشت گردی کو اسپانسر کرنے والی ریاست ہے بلکہ سپاہِ پاسداران انقلاب نے دہشت گردی کے فروغ کے لیے مالی معاونت کی ہے ،دہشت گردی کی کارروائیوں میں فعال انداز میں شرکت کی ہے اور اس کو ایک آلے کے طور پر استعمال کیا ہے‘‘۔

امریکا نے ماضی میں آئی آر جی سی سے تعلق رکھنے والے دسیوں افراد اور اداروں کو بلیک لسٹ قرار دے دیا تھا لیکن اس تنظیم کو مجموعی طور پر دہشت گرد قرار نہیں دیا تھا۔

2007ء میں امریکا کے محکمہ خزانہ نے پاسداران انقلاب کی بیرون ملک کارروائیوں کی ذمے دار القدس فورس کو دہشت گردی کی معاونت پر بلیک لسٹ کر دیا تھا اور کہا تھا کہ وہ ایران کی جانب سے دہشت گردی اور مزاحمتی گروپوں کی حمایت کی پالیسی کو عملی جامہ پہنانے کے لیے ایک بنیادی آلہ کار ہے۔