.

تمام بنک اور کاروبار سپاہِ پاسداران انقلاب سے لین دین بند کردیں : مائیک پومپیو

ایرانی رجیم کو تباہ کن خواہشات سے دستبردار کرانے کے لیے زیادہ سے زیادہ دباؤ برقرار رکھا جائے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کے وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے تمام بنکوں اور کاروباری اداروں کو خبردار کیا ہے کہ وہ پاسدارانِ انقلاب ایران کے ساتھ لین دین بند کردیں۔

انھوں نے امریکا کی جانب سے سپاہ ِپاسداران انقلاب ایران کو ایک غیر ملکی دہشت گرد تنظیم قرار دیے جانے کے بعد نیوز کانفرنس میں کہا ہے کہ ’’ ایران کے لیڈر انقلابی نہیں بلکہ جرائم پیشہ ہیں ۔اب دنیا بھر کے کاروباروں اور بنکوں کی یہ واضح ذمے داری ہے کہ وہ ان کمپنیوں کے ساتھ کوئی مالی لین دین نہ کریں جن کا سپاہ پاسداران ِانقلاب کے ساتھ کسی بھی طرح سے کوئی تعلق ہو‘‘۔

انھوں نے وضاحت کی ہے کہ سپاہ پاسداران انقلاب (آئی آر جی سی )کو دہشت گرد قرار دینے کے فیصلے کااطلاق ایک ہفتے کے اندر ہوگا۔

قبل ازیں انھوں نے ایک ٹویٹ میں کہا:’’ ایرانی نظام کی دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کے لیے امریکا نے اہم اقدام کرتے ہوئے ایران کی پاسدارانِ انقلاب کور کو القدس فورس سمیت ایک غیر ملکی دہشت گرد تنظیم قرار دے دیا ہے۔ہمیں ایران کے عوام کو ان کی آزادی واپس دلانا ہوگی‘‘۔

انھوں نے مزید کہا :’’ دہشت گردی کا استعمال ایرانی رجیم کی خارجہ پالیسی میں مرکزی حیثیت رکھتا ہے۔القدس فورس سمیت آئی آر جی سی کو دہشت گرد قرار دینے سے رجیم کو تباہ کن پالیسی پر عمل درآمد سے روکنے میں مدد ملے گی۔ایرانی رجیم جب تک اپنی تباہ کن خواہشات سے دستبردار نہیں ہوجاتا،اس وقت تک اس پر زیادہ سے زیادہ دباؤ برقرار رکھا جائے گا‘‘۔