.

امریکی سیکیورٹی مرکز کا اخوان کو دہشت گرد تنظیم قرار دینے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا پولیٹیکل سیکیورٹی سینٹر کی طرف سے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے ایرانی پاسداران انقلاب کو دہشت گرد قرار دینے کے فیصلے کی تحسین کرتےہوئے اخوان المسلمون کو بھی عالمی دہشت گرد تنظیم قرار دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

ایران اور اخوان کے بدترین دشمن سمجھے جانےوالے فرانک گیونی کے مرکزکی طرف سے کہا گیا ہےکہ ایران کے استبدادی مذہبی رجیم کا راستہ بند کرنےکے لیے امریکی صدر کا فیصلہ اہمیت کا حامل ہے۔

پولیٹیکل سیکیورٹی سینٹر کے مطابق امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیوکا کہنا ہے کہ پاسداران انقلاب کو دہشت گرد تنظیم قرار دینے کے فیصلے کا مقصد عالمی سطح پر دہشت گردی کی پشت پناہی کرنے والی ریاست کو مالی وسائل سےروکنا ہے۔

مائیک پومپیو کاکہنا ہے کہ ایرانی فوج کی سمندر پار دہشت گردی میں ملوث فیلق القدس کے ہاتھوں پر 600 امریکیوں کا خون ہے۔

امریکی دانشور گیونی نے پاسداران انقلاب کو دہشت گرد قرار دینے کے اعلان پر صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا شکریہ ادا کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ فیلق القدس اور حزب اللہ امریکا اور اس کے اتحادیوں کی دشمن ہیں۔

گیونی نے اخوان المسلمون کو بھی دہشت گرد تنظیم قرار دینے کا مطالبہ کیا اور کہاکہ اخوان المسلمون دہشت گردوں‌کی سرپرستی کرتی ہے اور پوری دنیا میں انتہا پسندانہ نظریات کے فروغ میں ملوث ہے۔