.

سوڈان : صدر عمر البشیر کی مقرّب 100 سے زیادہ شخصیات گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سوڈان میں "العربیہ" کے ذرائع نے جمعرات ے روز بتایا ہے کہ صدر عمر البشیر کے قریب سمجھے جانے والے 100 سے زیادہ افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق گرفتار ہونے والوں میں وزیراعظم محمد طاہر ایلا، سابق وزیر دفاع عبد الرحيم محمد حسين، نیشنل کانگریس پارٹی کے نامزد سربراہ احمد ہارون اور صدر البشیر کے دو سابق نائب علی عثمان اور بکری حسن شامل ہیں۔

علاوہ ازیں یہ خبریں بھی مل رہی ہیں کہ دارالحکومت خرطوم کے ہوائی اڈے کو ہوابازی کے لیے بند کر دیا گیا ہے۔

اس دوران ذرائع نے العربیہ کو تصدیق کی ہے کہ سوڈانی صدر عمر البشیر سبک دوش ہو چکے ہیں اور ملک میں اقتدار سنبھالنے کے لیے نئی قیادت مقرر کی جا رہی ہے۔

ادھر خرطوم میں مزید مظاہرین فوج کی جنرل کمان کے صدر دفتر کے اطراف پہنچ رہے ہیں جہاں کئی روز سے عوامی دھرنا جاری ہے۔ اس دوران بعض شاہراہوں پر لوگوں کو جشن مناتے ہوئے بھی دیکھا جا رہا ہے۔

اس سے قبل سوڈان کے سرکاری ریڈیو نے جمعرات کی صبح بتایا تھا کہ مسلح افواج کی جانب سے ایک اہم بیان جاری کیا جائے گا۔ اس دوران ملک میں فوجی انقلاب واقع ہونے کی بھی خبریں موصول ہو رہی ہیں۔

اسی طرح یہ خبریں بھی مل رہی ہیں کہ سوڈانی فوج کے افسران کا ایک گروپ سرکاری ریڈیو اور ٹیلی وژن کی عمارت میں داخل ہو گیا اور حکام سے تمام فریکوینسیز کو ضم کرنے کا مطالبہ کیا۔ ذرائع نے العربیہ کو بتایا ہے کہ فوج کی اعلی کمان کا ایک اجلاس منعقد ہوا جس میں صدر عمر البشیر موجود نہیں تھے۔