.

الجزائر کی آئینی کونسل کے سربراہ الطیب بلعیز مستعفی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

الجزائر کی دستوری کونسل کے سربراہ الطیب بلعیز اپنے عہدے سے دستبردار ہوگئے ہیں۔

دستوری کونسل کا 4 جولائی کو ہونے والے صدارتی انتخابات میں اہم کردار ہے۔ طیب بالعیز نے ایک بیان میں کہا ہے کہ انھوں نے سربراہِ ریاست کو اپنا استعفا پیش کردیا ہے۔سبکدوش صدر عبدالعزیز بوتفلیقہ کے خلاف احتجاجی تحریک میں حصہ لینے والے مظاہرین طیب بالعیز اور دوسرے عہدے داروں سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کررہے تھے۔

مظاہرین ’’تین بی‘‘ بلعیز ، وزیراعظم نورالدین بدوی اور ایوان بالا کے اسپیکر عبدالقادر بن صالح سے استعفے کا مطالبہ کررہے تھے لیکن عبدالعزیز بن بوتفلیقہ کے سبکدوش ہونے کے بعدعبدالقادر بن صالح کو عبوری صدر مقرر کردیا گیا تھا۔

بن صالح نے آئین کے تحت اپنے تقرر کا دفاع کیا تھا اور آیندہ صدارتی انتخابات کو شفاف انداز میں منعقد کرانے کا وعدہ کیا تھا۔

الجزائر کے آئین کے تحت دستوری کونسل انتخابات میں حصہ لینے والے امیدواروں کی جانچ پرکھ کرتی ہے اور انتخابات کے منظم انداز میں انعقاد کو یقینی بنانے کی بھی ذمے دار ہے۔طیب بالعیز سبکدوش صدربوتفلیقہ کے دورِ حکومت میں سولہ سال تک وزیر رہے تھے اور 10 فروری کو انھیں دوسری مدت کے لیے دستوری کونسل کا سربراہ مقرر کیا گیا تھا۔