.

ماکروں 5 برسوں میں نوترے ڈیم کیتھڈرل کی تعمیر نو کے لیے پُر امید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانس کے صدر عمانوئل ماکروں نے اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ اُن کا ملک پیرس میں واقع نوترے ڈیم تاریخی کیتھڈرل کی تعمیر نو کرے گا۔ انہوں امید ظاہر کی آگ سے تباہ ہونے والے کیتھڈرل کی تعمیر نو کا کام 5 سال میں مکمل کر لیا جائے گا۔

منگل کے روز ٹیلی وژن پر خطاب میں ماکروں کا کہنا تھا کہ "ہم نوترے ڈیم کو زیادہ خوب صورت شکل میں دوبارہ تعمیر کریں گے۔ میں چاہتا ہوں کہ یہ کام پانچ برس کے دوران پورا ہو جائے ... ہم ایسا کر سکتے ہیں ... ہم اس المیے کو اپنے اتحاد کا موقع بنا سکتے ہیں"۔

فرانسیسی صدر کا یہ بھی کہنا تھا کہ یہ وقت سیاست چمکانے کا نہیں ہے۔

کیتھڈرل میں خوف ناک آتش زدگی کی اطلاع ملنے کے بعد فرانسیسی صدر عمانوئل ماکروں نے اپنا قوم سے خطاب بھی منسوخ کردیا جو وہ پیر کی شب کرنے والے تھے۔

ماکروں نے پیر کو رات گئے آتش زدگی کے مقام کا دورہ کیا۔ انہوں نے اسی وقت کیتھڈرل کی تعمیر نو کے ارادے کا اظہار کیا جس کے بعض حصے 12 ویں صدی عیسوی کے زمانے کے ہیں۔

پیر کے روز لگنے والی آگ کے نتیجے میں کیتھڈرل کی تاریخی عمارت کو شدید نقصان پہنچا اور اس کی چھت مکمل طور پر گر گئی۔ اس دوران 400 سے زیادہ فائر فائٹرز نے رات بھر کام کیا اور تقریبا 14 گھنٹے کے بعد آگ پر قابو پا لیا گیا۔

اس موقع پر متعدد ارب پتی افراد، کمپنیوں اور مقامی حکام نے عطیات پیش کیے۔

آگ لگنے کے تقریبا 24 گھنٹے بعد 75 کروڑ یورو (84.5 کروڑ ڈالر) کے عطیات کا اعلان ہو چکا تھا۔

دوسری جانب پیرس میں فرانس کے اٹارنی جنرل ریمے ایٹس کا کہنا ہے کہ اس بات کی کوئی واضح دلیل نہیں کہ یہ آگ جان بوجھ کر لگائی گئی۔ انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے تحقیقات جاری ہیں جو طویل اور پیچیدہ ہوسکتی ہیں۔

آگ بجھانے کی کارروائی کے دوران ایک فائر فائٹر کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔