لیبیا میں‌ خلیفہ حفتر کی فوج کی مدد کی خبریں بے بنیاد ہیں: فرانس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

فرانس نے لیبیا میں جنرل خلیفہ حفتر کی فوج کی حمایت اورمدد کے تاثر کو بے بنیاد قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ فرانس لیبیا میں متحارب فریقین کے درمیان جنگ کا حصہ نہیں۔ جنرل حفتر کی فوج کی معاونت سے متعلق خبریں بےبنیاد ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ‌کے مطابق فرانسیسی وزارت خارجہ کے ایک عہدیدار نے ایک وضاحتی بیان میں کہا کہ طرابلس کی طرف سے جنرل خلیفہ خفتر اوران کی فوج کو سفارتی تحفظ دینے سےمتعلق تمام خبریں بنیاد ہیں۔

العربیہ چینل کے نامہ نگار نے بتایا تھاکہ لیبیا کی وفاق حکومت نے فرانس کے ساتھ سیکیورٹی تعاون ختم کرنے کا اعلان کیا ہے۔ قومی وفاق حکومت کی طرف سے فرانس پر لیبیا کی سرکاری فوج اور جنرل خلیفہ حفتر کی حمایت کا الزام عاید کیا گیا تھا۔

قومی وفاق حکومت کے وزیرداخلہ فتحی باش اغا نے ایک بیان میں کہا کہ فرانس کے ساتھ طےپائے تمام معاہدوں پرعمل درآمدروک دیا گیا ہے، خاص طورپردو طرفہ سیکیورٹی تعاون ختم کردیا گیا ہے۔ انہوں‌نے کہا کہ فرانس بے جا طورپر جنرل خلیفہ حفتر کی فوج کی مدد اور حمایت کررہا ہے۔

بدھ کو فرانسیسی وزارت خارجہ کے ایک عہدیدار نے 'العربیہ سے بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ طرابلس کی لڑائی میں دہشت گرد گروپوں کا حصہ لینا تشویش کا باعث ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں