.

لیبیا کی ملیشیاؤں کے لیے تیونس کے راستے قطری ہتھیاروں کی کھیپ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

تیونس کی ایک خاتون رکن پارلیمنٹ کا کہنا ہے کہ ان کے پاس موجود مصدقہ معلومات کے مطابق قطر کا ایک فوجی کارگو طیارہ جمعرات کے روز تیونس کے ایک ہوائی اڈے پر اترا۔ یہ طیارہ ہتھیاروں کی کھیپ لے کر پہنچا ہے جس کو لیبیا میں مسلح ملیشیاؤں تک پہنچایا جائے گا۔

رکن پارلیمنٹ لمیاء بلملیح کے مطابق ان کو حاصل ہونے والی معلومات سے یہ بات سامنے آتی ہے کہ مذکورہ طیارہ تیونس کے جزیرے جربہ میں جرجیس کے ہوائی اڈے پر پہنچا۔ طیارے میں ہتھیار اور عسکری ساز و سامان تھا۔

لمیاء نے فیس بک پر اپنے پیج پر پوسٹ میں بتایا کہ انہوں نے تیونس میں متعلقہ حکام سے رابطہ کیا تو ان حکام نے قطری طیارے کی موجودگی کی تصدیق کی۔

البتہ ان حکام کا کہنا تھا کہ قطری طیارہ تکنیکی وجوہات کی بنا پر موجود ہے اور اس کا لیبیا میں جاری واقعات سے کوئی تعلق نہیں۔

خاتون رکن پارلیمنت نے اپنی پوسٹ کے اختتام پر تیونس کے سفارتی حکام اور وزارت خارجہ سے اپیل کی ہے کہ وہ لیبیا میں جاری واقعات کے حوالے سے جانب داری پر کاربند رہیں۔