.

لیبیا : خلیفہ حفتر کی مخالف فورسز کا طرابلس کے نواح میں جوابی حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبیا کی قومی اتحاد کی حکومت کے تحت فورسز نے ہفتے کے روز دارالحکومت طرابلس کے جنوب میں مشرقی کمانڈر خلیفہ حفتر کے وفادار جنگجوؤں کے خلاف جوابی حملہ کیاہے۔

قومی حکومت کے فوجی آپریشن کے ترجمان مصطفیٰ المیجی نے ہفتے کے روز ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’ ہم نے حملے کے ایک نئے مرحلے کا آغاز کیا ہے۔ہمیں آج صبح ہی پیش قدمی کے احکامات جاری کیے گئے ہیں ‘‘۔

لیبیا کے مشرقی علاقوں پر قابض خود ساختہ فیلڈ مارشل خلیفہ حفتر کے زیر کمان لیبی قومی فوج نے 3 اپریل کو دارالحکومت طرابلس پر قبضے کے لیے اقوام متحدہ کی حمایت یافتہ حکومت کے تحت فورسز پر دھاوا بولا تھا ۔ اس کے بعد یہ پہلا موقع ہے کہ مدافع قوت نے بھرپور جوابی وار کیا ہے۔ دارالحکومت کے نواح میں متحارب فورسز کے درمیان شدید لڑائی جاری ہے اور خانہ جنگی کا شکار ملک میں کشیدگی میں اضافہ ہوا ہے۔

عالمی ادارہ صحت نے گذشتہ جمعرات کو ایک بیان میں کہا ہے کہ طرابلس کے نواح میں گذشتہ دو ہفتے کے دوران میں متحارب ملیشیاؤں کے درمیان جاری لڑائی کے نتیجے میں 205 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ ان میں 18 عام شہری شامل ہیں اور 913 افراد زخمی ہوئے ہیں۔