سری لنکا کو دھماکوں سے قبل بھارت نے بھی دہشت گردی سے متعلق خبردار کیا تھا: ذرائع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سری لنکا کے انٹیلی جنس حکام کے تین مصدقہ ذرائع نے بتایا ہے کہ اتوار کے روز ایسٹر تہوار کے موقع پر خود کش حملوں‌سے قبل بھارت نےبھی سری لنکن حکام کو دہشت گردوں کے ممکنہ خطرات کےبارے میں آگاہ کیا تھا۔اتوار کو ایسٹر کےموقع پر سری لنکا میں سلسلہ وار نصف درجن بم دھماکوں کے نتیجےمیں 300 سے زاید افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

بھارتی حکومت کے ایک ذریعے کا کہنا ہےکہ اتوار کےروز سری لنکا میں ہونے والے دہشت گردانہ واقعے سے دو گھنٹے قبل بھارتی انٹیلی جنس حکام نے سری لنکن حکام کو دہشت گردی کے بارے میں مطلع کیا تھا۔

ادھرسری لنکا کے ایک ذریعے کا کہنا ہے کہ بھارتی حکام نے ہفتے کی شام بھی سری لنکا کو ایسٹر پر دہشت گردی کے خطرات کے بارے میں خبردار کیا تھا۔ اس طرح بھارتی انٹیلی جنس حکام نے چار اور 20 اپریل کو بھی سری لنکن حکام کو دہشت گردی کے خطرات کے بارے میں خبردار کیا تھا۔

ذرائع کے حوالےسےسامنےآنےوالی اس خبر کے بعد سری لنکا اور بھارتی وزارت خارجہ نے اس کی تصدیق یا تردید نہیں کی ہے۔

منگل کو سری لنکن وزیراعظم نے ایسٹر پرہونےوالے دھماکوں کی ذمہ داری شدت پسند گروپ 'داعش' پرعاید کی اور کہا کہ یہ گروپ ان حملوں کی ذمہ داری خو دبھی قبول کرچکا ہے۔

وزیراعظم رانیل ویکر مسنگ نے صحافیوں کو بتایا کہ وہ مقامی لوگوں کے داعش کےساتھ تعاون اور بیرون ملک سے داعشی جنگجوئوں کی واپسی پر نظر رکھے ہوئےہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں