سری لنکا: سیکورٹی فورسز کی چھاپہ مار کارروائی، فائرنگ اور دھماکوں کے بعد 15 لاشیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سری لنکا میں ہفتے کے روز حکام نے اعلان کیا ہے کہ ملک کے مشرقی ساحل پر ایک گھر کے محاصرے کے دوران وہاں موجود دہشت گردوں کی جانب سے فائرنگ اور خود کو دھماکوں سے اڑانے کے بعد 15 افراد کی لاشیں ملی ہیں۔

فوجی ترجمان سمیت اتاپتو کے مطابق جمعے کی شام دارالحکومت سے 370 کلو میٹر مشرق میں واقع قصبے کلمونائے میں فوجی اہل کاروں نے ایک گھر کی جانب بڑھنے کی کوشش کی تو مسلح افراد نے فائرنگ شروع کر دی۔

پولیس اور فوج کی مشترکہ کارروائی سے قبل یہ اطلاع ملی تھی کہ ایسٹر کے موقع پر خونی حملوں کے ذمے دار عناصر کلمونائے میں روپوش ہیں۔ پولیس کے مطابق مکان کے محاصرے کے دوران وہاں موجود 3 افراد نے خود کو دھماکے سے اڑا دیا۔ اس کے نتیجے میں 3 خواتین اور 6 بچے ہلاک ہو گئے۔ سیکورٹی فورسز کو مکان کے باہر 3 افراد کی لاشیں ملی ہیں جن کے بارے میں شبہ ہے کہ یہ خود کش بم بار تھے۔

چھاپہ مار کارروائی کے دوران ایک گھنٹے تک فائرنگ کا تبادلہ جاری رہا۔ کارروائی میں مذکورہ مکان سے دھماکا خیز جیلاٹن کی 150 اِسٹکس، گولہ بارود اور داعش تنظیم کا جھنڈا برآمد کر لیا گیا۔

دوسری جانب امریکی وزارت خارجہ نے سری لنکا کا سفر کرنے کے حوالے سے اپنا الرٹ لیول بڑھا دیا ہے۔ وزارت خارجہ نے امریکی شہریوں پر زور دیا ہے کہ وہ حالیہ صورت حال کے پیش نظر سری لنکا کے لیے اپنے سفر کے پلان پر نظر ثانی کریں۔

یاد رہے کہ گزشتہ اتوار کو سری لنکا میں چھ خونی دھماکوں میں 250 افراد مارے گئے تھے۔ ابھی تک ان حملوں سے مبینہ تعلق ہونے کے شبہے میں 75 افراد کو حراست میں لیا جا چکا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں