.

بیلجیم میں بچے کے وحشیانہ قتل پر فلسطینی ماں صدمے سے نڈھال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بیلجیم میں ایک فلسطینی اور لبنانی نژاد خاندان کے کم سن بچے کے بے رحمی کے ساتھ قتل مجرمانہ واقعے نے بچے کی ماں کو شدید صدمے سے دوچار کیا ہے۔

العربیہ چینل کی رپورٹ کے مطابق 9 سالہ دانیا چند روز قبل شمالی بیلجیم میں رانسٹ قصبے میں قائم پناہ گزین کیمپ میں اپنے گھر سے سائیکل پر پیراکی کے لیے نکلا مگر واپس نہیں آیا۔ اس کے والدین نے اسے ہرجگہ تلاش کیا مگر اس کا سراغ نہیں ملا۔ پولیس نے بچے کو تلاش کرتے ہوئے ایک مشکوک گڑھا کھودا جس دانیاکو قتل کرنے کےبعد دفن کردیا گیا تھا۔ فی الحال اس مجرمانہ واقعےکی وجہ سامنے نہیں آئی۔ مقتول دانیال کی ماں امانی شحادہ کا تعلق فلسطین اور والد کا لبنان سے ہے۔ بچے کے وحشیانہ قتل کے بعد اس کی ماں شدید صدمے سے دوچار ہے بچے کےغم میں اس کا برا حال ہے۔

دوسری جانب پولیس کاکہنا ہے کہ بچے کو وحشیانہ تشدد کے بعد بے دردی کے ساتھ قتل کیا گیا۔ پولیس نے دانیا کے قتل کے شبے میں کیمپ میں موجود تین مشتبہ فلسطینیوں کوحراست میں لیا ہے۔دانیال کےوالدین کچھ عرصہ قبل لبنان سے اسپین اوروہاں سے بیلجیم آگئے تھے، جہاں وہ عارضی طور پر ایک پناہ گزین کیمپ میں رہائش پذیر تھے۔