.

شام کے سرحدی علاقے میں جھڑپ، تین ترک فوجی افسروں سمیت 23 ہلاک، 40 زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام کے سرحدی شہر عفرین میں ترک فوجیوں اور جنگجوئوں کے درمیان جھڑپ اور شامی فوج کی بمباری میں تین ترک فوجیوں سمیت 23 افراد ہلاک اور 40 زخمی ہو گئے۔

’’العربیہ‘‘ اور ’’الحدث‘‘ نیوز چینلز کے نامہ نگاروں کے مطابق عفرین کے مقام پر شامی فوج کی طرف سے توپ خانے سے گولہ باری کی گئی۔ ادھر کرد جنگجوئوں اور ترک فوج کے درمیان بھی گھمسان کی لڑائی کی اطلاعات ہیں۔

ترکی کے ایک سیکیورٹی اہلکار نے ہفتے کے روز بتایا کہ شمالی شام میں ادلب کے علاقے میں ان کے ایک انٹیلی جنس مرکز پر توپ خانے سے حملہ کیا گیا۔ ممکنہ طور پر یہ حملہ شامی فوج کی طرف سے کیا گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ انہیں‌ معلوم ہے کہ یہ حملہ شام کے اندر سے کیا گیا ہے تاہم فی الحال اس کا جواب نہیں دیا گیا۔ خیال رہے کہ ترکی نے ادلب میں 10 مقامات پر انٹیلی جنس پوائنٹ بنا رکھے ہیں۔