روس :مسافر طیارے میں دورانِ پرواز آگ لگ گئی ، 41 افراد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

روس میں ایک مسافر طیارے کو پرواز کے دوران میں آگ لگ جانے اور پھر ہنگامی لینڈنگ سے اکتالیس افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے ہیں۔

روس کی قومی فضائی کمپنی ایرو فلاٹ کے ملکیتی مسافر طیارے سخوئی سپر جیٹ 100 کو دارالحکومت ماسکو سے اڑان بھرنے کے بعد پرواز کے دوران میں آگ لگی تھی۔اس کو ماسکو کے شیر میتیف ہوائی اڈے پر ہنگامی طور پر اتار لیا گیا جس کے فوری بعد طیارے کے پچھلے حصے سے آگ شعلے بلند ہونا شروع ہوگئے ۔

ٹیلی ویژن کی فوٹیج کے مطابق ہوائی اڈے پر اترتے وقت طیارے کا پچھلا حصہ شعلوں کی لپیٹ میں تھا۔لینڈنگ کے بعد متعدد مسافروں نے طیارے کی ہنگامی کھڑکیوں سے کود کر اپنی جانیں بچائی ہیں۔روس کی سرکاری خبررساں ایجنسی تاس نے قبل ازیں طبی عملہ کے حوالے سے بتایا کہ حادثے میں تیرہ افراد ہلاک ہوگئے ہیں اور ان میں دو بچے بھی شامل ہیں۔ تاہم بعد میں روسی حکام نے اکتالیس ہلاکتوں کی تصدیق کردی ہے۔بہت سے مسافروں کے بارے میں کچھ معلوم نہیں اور امدادی کارکنان طیارے میں انھیں تلاش کررہے تھے۔

روسی خبررساں ایجنسیوں کے مطابق طیارہ ماسکو سے روس کے شمالی شہر مرمنسک جارہا تھا ،آگ لگنے کے بعد ہواباز نے اس کا رُخ واپس ماسکو کی جانب موڑ دیا تھا۔اس میں 78 مسافر سوار تھے۔ فوری طور پر یہ معلوم نہیں ہوسکا کہ اس میں عملہ کے کتنے ارکان سوار تھے۔ایک اطلاع کے مطابق طیارے میں 73 مسافر اور عملہ کے پانچ ارکان سوار تھے۔

روسی حکام نے حادثے کی تحقیقات شروع کردی ہے اور وہ اس امر کی بھی تحقیقات کررہے ہیں کہ آیا ہواباز حفاظتی قواعد وضوابط کی خلاف ورزی کے تو مرتکب نہیں ہوئے تھے۔فوری طور پر طیارے میں آگ لگنے کی وجہ معلوم نہیں ہوسکی۔ فلائٹ راڈار 24 کی اطلاع کے مطابق طیارے نے ہنگامی لینڈنگ سے قبل ماسکو کے گرد دو چکر لگائے تھے اور اس نے متعدد مرتبہ ہوائی اڈے پر اترنے کی کوشش کی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں