ملائیشیا میں دہشت گردی کی سازش ناکام، 4 داعشی دہشت گرد گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ملائیشیا کی پولیس نے شدت پسند گروپ 'داعش' سے تعلق کےشبے میں چار افرادکو حراست میں لینے کے بعد ان کے قبضے سے بھاری مقدار میں گولہ بارود بھی برآمد کرکے ملک کو تباہی سے بچالیا۔

ملائیشیا کی پولیس کاکہنا ہے کہ گرفتار دہشت گردوں کے قبضے سے بھاری مقدار میں بارود بھی برآمد ہوا ہے۔ دہشت گرد ملائیشیا میں مذہبی مقامات پرحملوں کی منصوبہ بندی کررہے تھے تاہم ان کی سازش ناکام بنا دی گئی۔

گرفتار داعشی دہشت گردوں کا سربراہ ملائیشیا سے تعلق رکھتا ہے جبکہ شدت پسند برما اور ایک انڈونیشیا کا شہری کابتایا جاتا ہے۔ ان کی گرفتاری گذشتہ ہفتے دارالحکومت کولالمپور اور ترنگانو صوبے سے عمل میں لائی گئی۔

ملائیشیا کےپولیس چیف عبدالحمید بدور نے بتایا کہ گرفتار عسکریت پسندوں نے اپنا تعلق داعش' کےساتھ ہونے کا دعویٰ کیاہے۔انہوں‌نے کہاکہ گرفتار شدت پسند ملک میں اہم شخصیات پر قاتلانہ حملوں، ہندو، عیسائی اور بدھ مذاہب کے پیروکاروں کی عبادت گاہوں کو نشانہ بنانے کی منصوبہ بندی کررہے تھے۔

پولیس نے تلاشی کےدوران دہشت گردوں کے قبضے سے 6 دستی بم، ایک پستول اور اس کی گولیاں قبضے میں لینے کے ساتھ دیگر گولہ بارود بھی ضبط کیا ہے۔

پولیس کاکہنا ہے کہ گرفتار دہشت گرد گذشتہ برس کولالمپور کے باہر ایک ہندو مندرمیں توڑپھوڑ کی کوشش کے دوران ہلاک ہونے شدت پسند اطفاء مسلم کے قتل کا بدلہ لینےکی منصوبہ بندی کررہےتھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں