اومان نے یو اے ای کے پانیوں کے نزدیک چار تجارتی بحری جہازوں پر حملے کی مذمت کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سلطنت آف اومان (عُمان)نے متحدہ عرب امارات کے ساحلی علاقے کے نزدیک اسی ہفتے آئیل ٹینکروں سمیت چار تجارتی بحری جہاز وں پر ’’ غیر ذمے دارانہ‘‘ حملے کی مذمت کردی ہے۔اس نے علاقائی سلامتی اورا ستحکام کو یقینی بنانے اوراس طرح کے ضرررساں واقعات سے بچنے کے لیے مشترکہ کوششوں کی ضرورت پر زور دیا ہے۔

اومان کی سرکاری خبررساں ایجنسی او این اے نے بدھ کو وزارت خارجہ کا ایک بیان جاری کیا ہے ۔اس میں اس نے کہا ہے کہ ’’ سلطنت جہازرانی کے تحفظ کو یقینی بنانے اور علاقائی استحکام اور سکیورٹی کو نقصان پہنچانے والی کسی بھی کارروائی سے بچنے کے لیے علاقائی اور بین الاقوامی سطح پر مشترکہ کوششوں کی اہمیت پر زور دیتی ہے‘‘۔

متحدہ عرب امارات کے پانیوں کے نزدیک گذشتہ اتوار کو چار تجارتی بحری جہاز وں کو ’تخریب کاری‘ کا نشانہ بنایا گیا تھا۔ان میں دو تیل بردار جہاز سعودی عرب کے تھے، ایک تجارتی بحری جہاز امارات اور ایک ناروے کا تھا۔ تخریب کاری کے حملے کا نشانہ بننے والا سعودی عرب کا ایک جہاز راس تنورہ کی بندرگاہ کی جانب جارہا تھا جہاں اس پر سعودی خام تیل لادا جانا تھا اور یہ تیل امریکا میں سعودی آرامکو کے صارفین کو بھیجا جانا تھا۔

یو اے ای کی وزارت خارجہ نے اس حملے کے بعد ایک بیان میں کہا تھا کہ’’ تجارتی بحری جہازوں کو تخریب کاری کا نشانہ بنایا جانا اور ان کے عملہ کی زندگیوں کو خطرے میں ڈالنا ایک خطرناک پیش رفت ہے‘‘۔ بیان میں عالمی برادری پر زور دیا گیا کہ وہ آبی ٹریفک کی سلامتی اور تحفظ کو نقصان پہنچانے والی کسی بھی پارٹی کو روکنے کے لیے اپنی ذمے داریوں کو پورا کرے ۔

مقبول خبریں اہم خبریں