.

آرامکو تنصیبات پر حملے،حوثیوں کے ایرانی پاسداران کا’اٹوٹ انگ ‘ہونے کا ثبوت:عادل الجبیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے وزیر مملکت برائے امور خارجہ عادل الجبیر نے کہا ہے کہ یمن کے حوثی باغی ایران کی سپاہِ پاسدارا ن انقلاب کا اٹوٹ انگ ہیں اور وہ پاسداران کے احکامات ہی کی بجاآوری کررہے ہیں۔

انھوں نے جمعرات کو اپنے سرکاری ٹویٹر اکاؤنٹ پر سلسلہ وار ٹویٹس میں لکھا ہے: ’’ حوثیوں کے سعودی عرب میں آرامکو کی تیل کی تنصیبات پر حملے ان کے پاسداران انقلاب کا غیر منقسم حصہ ہونے کا ثبوت ہیں‘‘۔

وہ مزید لکھتے ہیں:’’ حوثیوں نے اپنے عمل سے یہ بات ثابت کی ہے کہ وہ ایران کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہیں اور اس کے مفاد میں یمنی عوام کی ضروریات کو قربان کررہے ہیں‘‘۔

یمن کے حوثی باغیوں نے منگل کے روز سعودی عرب کی مشرق سے مغرب کی جانب جانے والی تیل کی مرکزی پائپ لائن پر دو ڈرون حملوں کی ذمے داری قبول کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔ حوثی باغیوں کے زیر انتظام المیسرہ ٹی وی نے فوجی حکام کے حوالے سے دعویٰ کیا تھا کہ سعودی عرب کی اہم تنصیبات پر سات ڈرون حملے کیے گئے ہیں۔واضح رہے کہ ایران امریکا کے ساتھ فوجی تنازع کی صورت میں تیل کی عالمی رسد کو بند کرنے کی دھمکی دے چکا ہے۔

پاکستان اور عرب ممالک نے سعودی عرب کے مشرقی صوبے میں تیل کی تنصیبات پر ان ڈرون حملوں کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔اسلام آباد میں دفتر خارجہ نے ایک بیان میں کہا کہ ’’ پاکستان سعودی عرب کے ساتھ مکمل یک جہتی کا اظہار کرتا ہے اور مملکت کے استحکام اور سلامتی کو لاحق کسی بھی خطرے کی صورت میں اس کی مکمل حمایت کے عزم کا اعادہ کرتا ہے‘‘۔ مصر نے کہا ہے کہ اس نے درپیش چیلنجز اور خطرات سے نمٹنے کے لیے سعودی عرب کے ساتھ روابط کو اعلیٰ سطح تک بڑھا دیا ہے۔