چین امریکی قومی سلامتی کے لیے حقیقی خطرہ ہے: مائیک پومپیو

'ہواوے' کے ساتھ تجارتی تعلق رکھنے والی امریکی کمپنیوں کا بھی بائیکاٹ کریں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو نے کہا ہے کہ چین امریکا کی قومی سلامتی کےلیے حقیقی خطرہ بن چکا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ 'گوگل' کےبعد امریکا کی مزید کمپنیاں‌بھی چینی ٹیکنالوجی کمپنی'ھواوےٹیکنالوجیز' کا بائیکاٹ کریں گی۔ ان کاکہنا ہے کہ امریکی انتظامیہ ان امریکی کمپنیوں کا بھی بائیکاٹ کرے گی جو چینی ٹیکنالوجی کمپنی'ہواوے' کے ساتھ اپنے تجارتی روابط برقرار رکھے گی۔

جمعرات کو'سی این این' ٹیلی ویژن کو دیے گئے ایک انٹرویو میں انہوں‌ نے الزام عاید کیا کہ چین اپنے ہاں ایگور نسل کی مسلمان اکثریت کی نگرانی کے لیے جدید ترین ٹیکنالوجی کے آلات کا استعمال کررہا ہے۔

خیال رہے کہ حال ہی میں امریکی انتظامیہ نے چینی ٹیکنالوجی کمپنی 'ہواوے' پر تین ماہ کے لیے امریکامیں کاروبار پر پابندی عاید کردی ہے۔

امریکی فیصلے کو چینی ٹیکنالوجی کمپنی ہی نہیں‌ بلکہ چین کی ٹیکنالوجی کی صنعت پر کاری ضرب قرا ردیا جا رہا ہے۔ امریکا دعویٰ‌کرتا ہے کہ 'ہواوے' چینی حکومت کےلیے جاسوسی کےآلات مہیا کررہی ہے۔ گذشتہ ہفتے امریکا نے چینی کمپنی کو بلیک لسٹ کردیا تھا۔

امریکی فیصلے کے رد عمل میں کمپنی کے چیئرمین'رن ژنگ فائی' نے کہا کہ امریکا کی طرف سے جو کچھ بھی ہو رہا ہے وہ قابو سے باہر ہے اور اس کے محرکات صرف سیاسی ہیں'۔ ان کا کہنا تھا کہ 'ہواوے' کے ساتھ مل کر کام کرنے والی امریکی کمپنیوں پر بھی اس طرح کا الزام عاید کرنا مناسب نہیں۔ انہوں‌نے کہا کہ امریکی حکومت اور انتظامیہ ہواوے کے بارے میں غلط طرز فکر کو فروغ دے رہےہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں