.

امریکی پابندیوں کے باعث ایران اور جرمنی کی باہمی تجارت بری طرح متاثر

اس وقت ایران میں جرمنی کی صرف 60 کمپنیاں کام کررہی ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کی طرف سے ایران پر عاید کی جانے والی پابندیوں کے باعث تہران اور دوسرے ملکوں کے درمیان تجارتی سرگرمیوں کوغیرمعمولی نقصان پہنچایا۔

خبر رساں اداروں کے مطابق جرمن تجارتی گروپ کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکی پابندیوں کے باعث جرمنی اور ایران کے درمیان اقتصادی اور تجارتی سرگرمیاں محدود ہوئی ہیں۔

جرمنی کے ایوان صنعت وتجارت کےعہدیدار فولکر ٹرییر نے جرمن خبر رساں ادارے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ امریکی پابندیوں کے باعث ایران اور جرمنی کی برآمدات میں 50 فی صد کمی آ چکی ہے جب کہ رواں سال کی پہلی چوتھائی جرمنی کے لیے ایرانی برآمدات میں 42 فی صد کمی آئی ہے۔

جرمن عہدیدار کا کہنا تھا کہ گذشتہ برس ایران میں‌ جرمن تجارتی کمپنیوں‌ کی تعداد 120 تھی اور امریکی پابندیوں‌ کے بعد یہ تعداد کم ہو کر 60 رہ گئی ہے۔

مسٹر ٹرییر کا کہنا تھا کہ امریکی پابندیوں‌ نے ایران کے ساتھ تجارتی روابط کو غیرمعمولی حد تک متاثر کیا ہے۔