.

بھارت: 1800 گائیں کی دیکھ بھال کرنے والی جرمن خاتون کون ہے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جرمنی سے تعلق رکھنے والی 61 سالہ خاتون فریڈریکا ایرینا نے اپنی زندگی بھارت میں بیمار گائیوں کی دیکھ بھال کے لیے وقف کر دی ہے۔

ایرینا نے بھارت کے شمالی شہر متھورا سے باہر فرانسیسی خبر رساں ایجنسی سے گفتگو میں بتایا کہ "ہمارے پاس اس وقت شہر میں 1800 کے قریب گائیں ہیں اور روزانہ پانچ سے پندرہ گائیں ہمارے پاس لائی جاتی ہیں"۔

گزشتہ ہفتے ایک اعلان میں کہا گیا تھا کہ ایرینا کو بھارت میں گائیوں کی دیکھ بھال کرنے والے شہریوں کے لیے مخصوص اعلی ترین ایوارڈ "پدما شری" دیا جائے گا۔ ایرینا نے پیر کے روز بتایا کہ انہیں بھارت میں داخلے کے لیے نیا ویزا جاری کر دیا گیا ہے اور اب وہ وہاں رہ سکتی ہیں۔

ایرینا تقریبا چوتھائی صدی قبل بھارت آئی تھیں۔ جرمن خاتون کے مطابق وہ گائیوں کے رہنے کی جگہ کی تعمیر پر اب تک اپنی ذاتی رقم سے 2.25 لاکھ ڈالر کے قریب خرچ کر چکی ہیں۔ ایرینا کہتی ہیں کہ گائیوں کی دیکھ بھال پر ماہانہ 45 ہزار ڈالر کے قریب اخراجات ہوتے ہیں۔

گائیوں کے رہنے کی جگہ پہنچنے والی بہت سی گائیں اندھی ہوتی ہیں یا پھر ٹٓریفک حادثات کے نتیجے میں زخموں سے دوچار ہوتی ہیں۔ اس کے علاوہ کچرے سے پلاسٹک کی تھیلیاں کھانے سے متعلق صحت کے مسائل بھی درپیش ہوتے ہیں کیوں کہ بھارت میں یہ تھیلیاں بکثرت پھیلی ہوئی ہیں۔

مذکورہ مقام پر لائی جانے والی تقریبا آدھی گائیوں کا مقدر موت ہوتا ہے۔

بھارت میں گائیوں کو ذبح ہونے سے بچانے کے لیے ملکی قوانین کو سخت کر دیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ مسلمانوں اور ہندوؤں کے اچھوت طبقے کے افراد پر حملوں کے واقعات میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ حملوں کا نشانہ بننے والے افراد پر شبہ ہوتا ہے کہ وہ گائے کے گوشت کا کاروبار کرتے ہیں۔