.

حوثی ملیشیا کی الحدیدہ میں فوجی پریڈ عالمی جہاز رانی کے لیے خطرہ ہے: یمنی وزیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے وزیر اطلاعات معمر مطہر الاریانی نے ایران نواز حوثی ملیشیا کی ساحلی شہر الحدیدہ میں حال ہی میں ایک فوجی پریڈ کے انعقاد کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے الحدیدہ بندرگاہ پر عالمی جہاز رانی کے لیے خطرہ قرار دیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ‌ نیٹ سے بات کرتے ہوئے معمر الاریانی نے کہا کہ الحدیدہ میں حوثی ملیشیا کا ایرانی لیڈر خمینی کی تصاویر اور حزب اللہ اور ایران کے پرچم اٹھا کر طاقت کا مظاہرہ کرنا انتہائی خطرناک پیش رفت ہے۔ انہوں‌ نے کہا کہ الحدیدہ میں ایک ایسے وقت میں فوجی پریڈ منعقد کی گئی جب اسی وقت میں دارالحکومت صنعاء میں بھی باب المندب اور بحیرہ روم کو بند کرنے کی سنگین دھمکیاں دی گئیں۔

یمنی وزیر اطلاعات نے کہا کہ حوثی ملیشیا کی طرف سے الحدیدہ میں طاقت کا مظاہرہ ایک ایسے وقت میں کیا گیا ہے جب دوسری طرف خطے میں ایرانی حمایت یافتہ ملیشیائوں‌ کی سرگرمیوں‌ میں اضافہ دیکھنے میں‌ آیا ہے۔ ایرانی حمایت یافتہ گروہ فرقہ وارانہ نعروں‌ کی ترویج کے ساتھ سعودی عرب، متحدہ عرب امارات میں تخریب کاری کی کارروائیوں اور دہشت گردی میں ملوث ہیں۔ ایرانی حمایت یافتہ میلشیائوں کے ہاتھوں عالمی جہاز رانی کو شدید خطرات لاحق ہیں۔

خیال رہے کہ حال ہی میں یمن حوثی ملیشیا کے جنگجوئوں نے بارودی سرنگوں کی صفائی کے لئے اقوام متحدہ سے ملنے والی فور ویل ڈائیو جدید گاڑیوں پر ایرانی انقلاب کے بانی خمینی اور حزب اللہ کے پرچم لگائے الحدیدہ شہر میں گشت کیا اور طاقت کا مظاہرہ کرنے کی کوشش کی تھی۔