.

سعودی ولی عہد ہیروشیما میوزیم میں ، ایٹم بم حملے میں بچ جانے والی جاپانی خاتون سے ملاقات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے جاپان کے شہر ہیروشیما میں امن میموریل میوزیم کا اتوار کے روز دورہ کیا ہے۔اس عجائب گھر میں دوسری عالمی جنگ میں ہیروشیما پر امریکا کے جوہری بم کے حملے کی تباہ کاریوں کے شواہد محفوظ کیے گئے ہیں۔

سعودی عرب کی سرکاری خبررساں ایجنسی (ایس پی اے) کے مطابق شہزادہ محمد بن سلمان کو عجائب گھر کی سیر کے دوران میں ایک ویڈیو پریزینٹیشن دی گئی اور ہیروشیما شہر کی تصاویر دکھائی گئیں۔ان میں ایٹم بم کے حملے سے قبل کی تاریخ کی عکاسی کی گئی تھی اور حملے میں تباہ شدہ شہر کی تصاویر شامل تھیں ۔

سعودی ولی عہد کی عجائب گھر کے دورے کے موقع پر جوہری بم کے حملے میں زندہ بچ جانے والی ایک جاپانی خاتون سے ملاقات بھی کرائی گئی۔انھوں نے معزز مہمان کو شہر میں جوہری بم کے حملے سے قبل ، دوران اور بعد میں پیش آنے والے واقعات کی تفصیل سے آگاہ کیا۔

ہیروشیما کے دورے کے موقع پر سعودی شہزادوں اور وزراء کی بڑی تعداد بھی شہزادہ محمد بن سلمان کے ہمراہ تھی۔ ان میں نیشنل گارڈ کے وزیر شہزادہ عبداللہ بن بندر بن عبدالعزیز ، نائب وزیر دفاع شہزادہ خالد بن سلمان بن عبدالعزیز ،وزیر ثقافت شہزادہ بدر بن عبداللہ بن فرحان اور وزیر مملکت برائے امور خارجہ عادل الجبیر شامل تھے۔