.

ایران نے ہمیشہ جنگوں کے لیےخطے کی اپنی وفادار قوتوں کو استعمال کیا: امریکی سفیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں نئے امریکی سفیر جان ابی زید نے 'العربیہ' چینل کو دیئے گئے ایک انٹرویو میں کہا ہے کہ ایران نے علاقائی جنگوں کے دوران خطے میں‌ موجود اپنے وفادار گروپوں کو استعمال کیا جو ایران کی جگہ جنگیں لڑتے رہے ہیں۔ انہوں‌ نے کہا کہ ایران کی سپاہ پاسداران انقلاب افراتفری سے فائدہ اٹھا کر رقم بٹورتی ہے۔

ایک سوال کے جواب میں جان ابی زید نے کہا کہ ایران نے خطے میں اپنے وفاروں کو اپنی جگہ جنگوں میں‌ جھونکا۔ لبنان میں حزب اللہ، عراق میں ایرانی رجیم کی وفادار ملیشیائیں اور یمن میں‌ حوثی گروپ اس کی مثالیں ہیں۔ ایران مشکلات کھڑی کر کے، دہشت گردی اور تباہی کے مواقع پیدا کرنے کی کوشش کرتا رہا ہے۔

سعودی عرب میں نئے امریکی سفیر نے کہا کہ ہمیں ایرانی قوم کے ساتھ کوئی تنازع نہیں۔ ہم صرف ایران کے حکمران طبقے کے خلاف نبرد آزما ہیں جو دوسرے ملکوں میں دہشت گردی برآمد کرتا ہے۔ ہمیں مسئلہ ایرانی رجیم سے ہے جو ملک کے روشن مستقبل کی راہ میں رکاوٹ ہے۔ ایرانی رجیم قوموں کے درمیان پرامن بقائے باہمی کی اجازت نہیں دیتا۔

انہوں‌ نے مزید کہا کہ امریکا، ایرنیوں کےساتھ بات چیت کے مواقع پیدا کرنے کی کوششیں جاری رکھے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ ایران کو خطے کے ممالک میں مداخلت سے باز رہنا ہوگا۔