.

فرانس کے صدر کا "خلائی فورس" تشکیل دینے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانس کے صدر عمانوئل ماکروں نے ہفتے کے روز خلا کے لیے مخصوص عسکری کمان تشکیل دینے کا اعلان کیا ہے۔ ماکروں نے یہ اعلان 14 جولائی کو فرانس کے قومی دن کے حوالے سے تقریبات سے قبل اپنے خطاب میں کیا۔

ماکروں نے پیرس میں وزارت فوج کے احاطے میں فوجی اہل کاروں کے سامنے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ "اپنی خلائی صلاحیتوں کی مضبوطی کو یقینی بنانے کے لیے آئندہ ستمبر میں خلا کے لیے ایک بڑی کمان تشکیل دی جائے گی۔ یہ فرانسیسی فضائیہ کا حصہ ہو گی اور اس کو Air and Space Force کا نام دیا جائے گا۔

فرانسیسی صدر کے مطابق قومی سلامتی کے لیے خلاء ایک حقیقی چیلنج ہے۔ ماکروں نے گذشتہ سال باور کرایا تھا کہ وہ فرانس کو "دفاعی خلائی حکمت عملی" فراہم کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ ہفتے کے روز انہوں نے تصدیق کی کہ یہ حکمت عملی تیار ہو چکی ہے۔

ماکروں نے واضح کیا کہ خلائی فورس کی تشکیل سے ہم خلائی پوزیشن کے حوالے سے اپنی جان کاری میں اضافہ کر سکیں گے اور اپنے سیٹلائٹس کی بہتر طور پر حفاظت کر سکیں گے۔

جاسوشی، تعطل اور معلوماتی حملوں کے سبب خلاء بھی اقوام کے درمیان مقابلے کا میدان بن چکا ہے۔

دنیا میں بڑی خلائی طاقتیں امریکا، چین اور روس کئی برس سے خلاء پر غلبہ پانے کی دوڑ میں شریک ہیں۔

فرانس میں عسکری پروگرام ایکٹ 2019-2025 کے متن میں خلائی دفاع کے لیے 3.6 ارب یورو کا بجٹ مختص کرنے کے لیے کہا گیا ہے۔

امریکا میں پینٹاگان اعلان کر چکا ہے کہ وہ خلائی فورس تشکیل دینے کا ارادہ رکھتا ہے۔ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی یہ چاہت کانگرس کی منظوری کے انتظار میں ہے۔