.

اسرائیلی کاروباری شخصیات کی افغانستان میں خاتون اوّل سے ملاقات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیل کی ایک بین الاقوامی مشاورتی فرم کے سربراہ یوآف مردخائی نے رواں ماہ جولائی کے اوائل میں افغانستان کی خاتون اوّل رولا غنی سے ملاقات کی۔ ملاقات میں اس بات پر اتفاق ہوا کہ اسرائیلی کمپنیاں افغان اراضی میں سرمایہ کاری کریں گی۔

مذکورہ عرصے میں یوآف مردخائی کی صدارت میں ایک پانچ رکنی وفد نے دو قابل اعتماد کاروباری شخصیات کے ہمراہ کابل کا دورہ کیا۔ دورے کا مقصد افغانستان میں سرمایہ کاری کے مواقع تلاش کرنا تھا۔

مردخائی کے مطابق یہ ملاقات افغانستان کی خاتون اول رولا غنی سے متعلقہ ایک کمپنی کی دعوت پر منعقد ہوئی۔ اس سلسلے میں افغان ذمے داران کے ساتھ تجارتی بات چیت اور اجلاسوں کے حوالے سے تمام تر رابطہ کاری اسی کمپنی نے انجام دی۔

تین روز تک جاری رہنے والے اس دورے میں یوآف مردخائی اور ان کے اسرائیلی تجارتی شراکت داروں نے افغانسان کی خاتون اوّل رولا غنی سے ملاقات کی۔

افغان ذمے داران کے ساتھ کئی اجلاسوں کے دوران اس بات پر اتفاق رائے سامنے آیا کہ اسرائیلی کمپنیوں کی کابل، فراہ، ہلمند اور نیم روز میں مالی سرمایہ کاری ہو گی۔ قابل ذکر بات یہ ہے کہ یوآف مردخائی نے اسرائیلی وفد میں کاروباری شخصیت کی حیثیت سے شامل ہو کر بحرین کے اقتصادی ورکشاپ میں بھی شرکت کی تھی۔

ایسا نظر آ رہا ہے کہ اسرائیلی حکومت غیر سرکاری اور اقتصادی تنظیموں کی وساطت سے عرب اور غیر عرب مسلمانوں کے ساتھ اپنی شراکت داری کو وسیع کرنے کا ارادہ رکتھی ہے۔