وزیر خارجہ جواد ظریف پر امریکی پابندیاں پاگل پن اور شکست کی علامت ہیں: قاسم سلیمانی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سپاہِ پاسداران انقلاب ایران کی القدس فورس کے کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی نے وزیر خارجہ جواد ظریف پر امریکا کی عاید کردہ پابندیوں کو ’پاگل پن‘ اور ’شکست کی علامت‘ قرار دیا ہے۔

ایران کی نیم سرکاری خبررساں ایجنسی ’’فارس‘‘ کے مطابق قاسم سلیمانی نے ایک بیان میں دعویٰ کیا:’’وزیر خارجہ جواد ظریف پر پابندیاں اس بات کا ثبوت ہیں کہ وہ رائے عامہ اور امریکیوں پر خاطر خواہ حد تک اثرانداز ہونے کی صلاحیت رکھتے ہیں اور وہ امریکی لیڈروں کی ’جہالت‘ کو طشت از بام کر رہے ہیں۔‘‘

امریکا نے اکتیس جولائی کو جواد ظریف پر پابندیاں عاید کی تھیں۔ ان کے ساتھ ایک بیان میں امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے کہا تھا کہ ’’وزیر خارجہ جواد ظریف رہبرِ اعلیٰ آیت اللہ علی خامنہ ای کی پالیسیوں کو خطے اور دنیا بھر میں پھیلانے کے ذمے دار ہیں۔ان پر آج پابندیوں کے نفاذ سے اسی حقیقت کی عکاسی ہوتی ہے‘‘۔

فارس کے مطابق جنرل قاسم سلیمانی منگل کی صبح پاسداران انقلاب کی وردی میں تہران میں وزارتِ خارجہ میں جواد ظریف سے ملاقات کے لیے گئے تھے۔اس کے بعد فارس نے قاسم سلیمانی کا یہ بیان نقل کیا ہے:’’ اسلامی جمہویہ ایران کے وزیر خارجہ پر امریکا کی پابندیاں پاگل پن ہیں اور یہ وائٹ ہاؤس کی واضح شکست کی علامت ہیں‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں