.

جنرل عبدالفتاح البرھان سوڈانی خود مختار کونسل کے سربراہ مقرر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سوڈان کی عبوری عسکری کونسل نے خود مختار کونسل کےلیے اپنے پانچ نمائندوں کا اعلان کردیا ہے۔ عسکری کونسل نے ملک کا نظم ونسق چلانے کے لیے تشکیل دی جانےوالی خود مختار کونسل کی سربراہی کے لیے بری فوج کےسربراہ جنرل عبدالفتاح البرھان کو کونسل کا چئیرمین مقرر کیا ہے۔

سوڈان کی خود مختار کونسل میں فوج کی طرف سے جنرل محمد حمدان المعروف حمیدتی، لیفٹیننٹ جرنل شمس الدین کباشی، جنرل یاسر العطا اور جنرل صلاح عبدالخالق کو رکن مقرر کیے گئے ہیں۔ خیال رہے کہ اس وقت سوڈان کا عبوری انتظام وانصرام چلانے والی عبوری عسکری کونسل کے7 سات ارکان ہیں۔

دوسری جانب سوڈان کی اپوزیشن جماعتوں کی طرف سے بھی اپنے نمائندے مقرر کرنے کے لیے ناموں پرغور کیا جا رہا ہے۔اپوزیشن کی فریڈم اینڈ چینج فورسز کے رہ نما ساطع الحاج نے ایک بیان میں بتایا کہ دستوری اور سیاسی دستاویز پردستخط کی تمام تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔ کل 17 اگست کو خرطوم میں فرینڈشپ ہال میں تمام فریقین اس پردستخط کریں گے۔

ایک سوال کے جواب میں الحاج نے کہا کہ دستوری اور سیاسی دستاویز نئے سوڈان کا نقطہ آغاز ہے۔ یہ پروگرام کافی حد تک سوڈانی عوام کے دیرینہ مطالبات کی عکاسی کرتا ہے۔ اس کے نتیجے میں ہم ملک میں جمہوریت، دیر پا امن، شہری ریاست، قانون کی بالا دستی، انسانی حقوق کی عمل داری،حقوق فرائض میں تمام سوڈانی شہریوں کا احترام یقینی بنانے میں مدد ملے گی۔

درایں اثناء سوڈان کے انقلابی محاذ نے کل ہفتے کے روز دستوری اور سیاسی دستاویز پردستخط کی تقریب کے بائیکاٹ کا اعلان کیا ہے۔ فرنٹ کے ترجمان محمد زکریا نے 'العربیہ' چینل کو بتایا کہ ہم نے کل کی تقریب میں شرکت نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہمیں ابھی تک مکمل ویژن کے ادراج کے بارے میں کچھ نہیں بتایا گیا۔ جشن یا تعیناتیاں ہمارے لیے کوئی معنیٰ نہیں رکھتیں اور نہ ہی ہم اس طرح کےاقدامات کوقبول کریں گے