پیراگوائے کی طرف سے حزب الله، حماس، القاعدہ اور داعش دہشت گرد تنظیمیں قرار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

لاطینی امریکا کے ملک پیراگوائے نے گذشتہ روز القاعدہ، حزب اللہ، داعش اور حماس کو دہشت گرد تنظیموں کی فہرست میں شامل کر لیا۔ اس حوالے سےJuan Ernesto Villamayor نے ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ "حزب اللہ اور حماس کی جانب سے بین الاقوامی سطح پر کارروائیوں کا سلسلہ جاری ہے ، اس کا بڑا حصہ کرہ ارض کے مغرب میں ہے"۔

انگریزی روزنامےABC کے مطابق پریس کانفرنس میں وزیر داخلہ نے کہا کہ "داعش" اور "القاعدہ" تنظیمیں بھی اندرون و بیرون ملک سنگین نوعیت کے انفرادی اور اجتماعی خطرے کا باعث ہیں۔ اس موقع پر وزیر داخلہ کی جانب سے صحافیوں میں تقسیم کیے گئے بیان کے ساتھ ایک صدارتی فرمان کی 4 کاپیاں بھی شامل تھین۔ مؤرخہ 9 اگست کے اس فرمان پر پیراگوائے کے صدر نے دستخط کیے ہیں۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ پیراگوائے دہشت گردی کے خلاف عالمی جنگ میں بھرپور طور پر تعاون کر رہا ہے۔ اس سلسلے میں وہ بین الاقوامی معاہدوں اور سمجھوتوں میں شامل ہے اور اقوام متحدہ میں بھی انسداد دہشت گردی کے تمام اقدامات کو سپورٹ کرتا ہے۔ پیراگوائے کے (لبنانی نژاد) صدر ماریو عبدو بینیٹز کی حکومت دہشت گردی کے انسداد کے سلسلے میں مزید مالی اقدامات کرے گی۔ پیراگوائے کے سیکورٹی اور انٹیلی جنس اداروں کے پاس معلومات حزب اللہ کے سرحدی شہروں میں جرائم پیشہ تنظیموں کے ساتھ تعلقات کو واضح کرتی ہیں۔ اس میں برازیل اور ارجنٹائن کے ساتھ سرحدی تکون کی جانب اشارہ ہے۔ یہاں 10 ہزار سے زیادہ عرب رہتے ہیں جن میں زیادہ تر لبنانی ہیں۔ پیراگوائے کے وزیر داخلہ کے مطابق یہاں حزب اللہ منشیات کی اسمگلنگ، مالکانہ حقوق کے سرقے اور منی لانڈرنگ میں شریک ہے۔

ادھر Bloomberg نیوز ایجنسی نے اپنے طور پر بتایا ہے کہ برازیل بھی پیراگوائے کے گذشتہ روز کیے جانے والے اقدامات کے مماثل اقدام کرنے کے بارے میں سوچ رہا ہے۔ اس سے قبل ارجنٹائن نے جولائی میں حزب اللہ کو ایک دہشت گرد تنظیم قرار دیا تھا۔

یہ بات علم میں رہے کہ برازیل کی جانب سے حزب اللہ کو دہشت گرد تنظیم قرار دیے جانے کی صورت میں ایران کے ساتھ برازیل کے تعلقات کشیدہ ہو سکتے ہیں۔ ایران اوسطا سالانہ 2.5 ارب ڈالر کی برازیلی مصنوعات درآمد کرتا ہے۔ اسی طرح برازیل کو دہشت گردی کا نشانہ بننے کا اندیشہ ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں