.

افغانستان: شادی کی تقریب میں خودکش بم دھماکے میں ہلاکتوں کی تعداد 80 ہو گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افغانستان کے دارالحکومت کابل میں ہفتے کی شب شادی کی ایک تقریب میں خودکش بم دھماکے میں مرنے والوں کی تعداد اسّی ہو گئی ہے۔

افغان وزارت داخلہ کے ترجمان نصرت رحیمی نے بدھ کے روز ایک بیان میں کہا ہے کہ اس بم دھماکے میں 63 افراد ہلاک اور182 زخمی ہوگئے تھے۔ان میں سترہ افراد اسپتال میں اپنے زخموں کی تاب نہ لا کردم توڑ گئے ہیں۔ انھوں نے بتایا کہ ابھی 160 زخمی اسپتالوں میں یا اپنے گھروں میں زیرعلاج ہیں۔

سخت گیر جنگجو گروپ داعش نے اس تباہ کن بم حملے کی ذمے داری قبول کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔اس پر امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے تبصرہ کرتے ہوئے اعتراف کیا تھا کہ داعش کے جنگجو بعض علاقوں میں قوت پکڑ رہے ہیں اور وہ آج پہلے سے زیادہ مضبوط ہیں لیکن ساتھ ہی انھوں نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ اس دہشت گرد گروپ کی حملے کرنے کی صلاحیت کو محدود کردیا گیا ہے۔

افغان صدر اشرف غنی نے اس حملے کے بعد ملک میں سخت گیر جنگجو گروپ داعش کی تمام محفوظ پناہ گاہیں تباہ کرنے کے عزم کا اظہار کیا تھا جبکہ طالبان نے یہ سوال اٹھایا تھا کہ امریکا داعش کے حملہ آوروں کی پیشگی شناخت میں کیوں ناکام رہا تھا؟