.

سوڈان: جنرل عبدالفتاح البرہان کی نئی خودمختار کونسل کے سربراہ کی حیثیت سے حلف برداری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سوڈان کی عبوری فوجی کونسل کے سربراہ جنرل عبدالفتاح البرہان نے نو تشکیل شدہ خودمختار کونسل کے سربراہ کی حیثیت سے حلف اٹھا لیا ہے۔ان سے سوڈان کی عدلیہ کے چیف جسٹس نے حلف لیا ہے۔

نئی خودمختار کونسل گیارہ ارکان پر مشتمل ہے اور اس کے باقی دس ارکان بھی آج اپنی ذمے داریوں کا حلف اٹھا رہے ہیں۔توقع ہے کہ عبوری دور کے لیے نامزد وزیراعظم عبداللہ حمدوک بھی آج اپنے عہدے کا حلف اٹھائیں گے۔

سوڈان کی اس خود مختار کونسل نے گذشتہ سوموار کو حلف اٹھانا تھا لیکن حزب اختلاف کی درخواست پراس کی تشکیل 48 گھنٹے کے لیے ملتوی کردی گئی تھی۔حزبِ اختلاف کے اتحاد برائے آزادی اور تبدیلی کا کونسل کے لیے اپنے پانچ ارکان کے ناموں پر اتفاق نہیں ہو سکا تھا اور اس نے اپنے پانچ ارکان کے انتخاب تک کونسل کی تشکیل ملتوی کرنے کی درخواست کی تھی۔

سوڈان کی حکمراں عبوری فوجی کونسل کی قیادت اور حزبِ اختلاف کے لیڈروں کے درمیان گذشتہ ہفتے کے روز عبوری مدت کے لیے شراکت اقتدار کا ایک سمجھوتا طے پایا تھا۔اس کے تحت پہلے عبوری حکومت تشکیل دی جارہی ہے اور پھر بتدریج ملک میں نئے عام انتخابات کے انعقاد کی راہ ہموار ہوگی۔

نو تشکیل شدہ خود مختار کونسل ملک کی اعلیٰ اختیاراتی اتھارٹی ہوگی۔ تاہم انتظامی اختیارات کابینہ کے وزراء کو حاصل ہوں گے۔شراکتِ اقتدار کے فارمولے کے تحت اس کے پانچ ارکان کا انتخاب عبوری فوجی کونسل نے کیا ہے جبکہ پانچ ارکان حزبِ اختلاف کے اتحاد کے نامزد کردہ ہیں۔ گیارھویں رکن کا دونوں فریقوں نے متفقہ طور پر انتخاب کیا ہے۔