.

حوثی ملیشیا کے لیے ایرانی امداد امریکی اتحادیوں کی سلامتی کے لیے خطرہ ہے:واشنگٹن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا نے ایک بارپھر کہا ہے کہ ایران کی طرف سے یمن کے حوثی باغیوں کی مدد خطے میں امریکی اتحادیوں کی سلامتی اور ان کے استحکام کے لیے شدید خطرہ ہے۔

امریکی سینٹرل کمانڈ کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ایران یمن میں حوثی ملیشیا کی مدد کرکے پورے خطے کے امن کو تباہ کرنا چاہتا ہے۔ یہ بیان گذشتہ روز یمن میں ذمار گورنری میں امریکی ڈرون طیارے'ایم کییو 9' کومار گرائے جانے کے واقعے کے بعد سامنے آیا ہے۔

امریکی حکام نے اپنی شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بدھ کے روز 'رائیٹرز' کو بتایا کہ حوثی باغیوں نے منگل کی شام امریکا کا ایک ڈرون طیارہ مار گرایا تھا۔

یہ پہلا موقع نہیں کہ حوثی باغیوں نے یمن میں امریکی ڈرون مار گرایا ہے۔ جون 2019ء کو بھی امریکی فوج نے ایک بیان میں کہا تھا کہ یمن کے ایرانی حمایت یافتہ جنگجوئوں نے امریکا ایک ڈرون طیارہ مار گرایا تھا۔

یمن میں امریکی ڈرون طیارہ مار گرائے جانے کا واقعہ ایک ایسے وقت میں پیش آیا ہے جب دوسری جانب امریکا اور ایران کے درمیان سخت کشیدگی پائی جا رہی ہے۔ ایران کی طرف سے خطے کی سلامتی کو لاحق خطرات کے پیش نظر امریکا نے مشرق وسطیٰ میں بڑی تعداد میں اپنی فوج تعینات کی ہے۔