.

عرب اتحاد نے حوثی ملیشیا کےخمیس مشیط کی جانب آنے والے ایک اور ڈرون کو مارگرایا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عرب اتحاد نے حوثی ملیشیا کے سعودی عرب کے جنوب مغربی شہر خمیس مشیط کی جانب آنے والے ایک اوربغیر پائیلٹ جاسوس طیارے کو مارگرایا ہے۔حوثیوں نے یہ ڈرون صوبہ عمران سے چھوڑا تھا۔

عرب اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے کہا ہے کہ ایران کی حمایت یافتہ دہشت گرد حوثی ملیشیا کی حملوں کے لیے ڈرونز بھیجنے کی کوششیں اسی طرح ناکامی سے دوچار ہوں گی۔

انھوں نے ایک بیان میں کہا کہ ’’عرب اتحاد ان بغیر پائیلٹ جاسوس طیاروں کے خلاف جوابی کارروائی میں شہریوں اور شہری تنصیبات کے تحفظ کے لیے تمام آپریشنل طریق کار کو اختیار کررہا ہے۔‘‘

کرنل ترکی المالکی نے حوثیوں کے خلاف سدِّ جارحیت کے لیے عرب اتحادی فورسز کے مسلسل اقدامات کی ضرورت پر زور دیا ہے تاکہ حوثیوں کی ڈرون اور میزائل حملوں کی صلاحیت کو تہس نہس کیا جاسکے۔

ان کا کہنا تھا کہ ایران کے حمایت یافتہ حوثیوں نے برسرزمین جنگ میں شکست سے دوچار ہونے کے بعد اب ڈرون اور میزائل حملے تیز کردیے ہیں۔

قبل ازیں سعودی عرب کی شاہی فضائیہ نے منگل کے روز یمن کی سرحد کے نزدیک واقع جنوبی شہر نجران کی فضا میں تین بیلسٹک میزائل مار گرائے ہیں۔العربیہ نیوز کو میزائلوں کا سراغ لگانے اور انھیں مارگرانے کے وقت کی تصاویر فراہم کی گئی ہیں۔ان کا ملبہ گرنے سے معمولی نقصان ہوا ہے۔