.

امریکا کی ایران پرانتہائی دباؤ ڈالنے کی پالیسی ناکامی سے دوچار ہوگی : علی خامنہ ای

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران کے رہبراعلیٰ آیت اللہ علی خامنہ ای نے ایک مرتبہ پھر اپنے اس موقف کا اعادہ کیا ہے کہ ان کا ملک امریکا سے کبھی مذاکرات نہیں کرے گا۔ ان کا کہنا ہے کہ امریکا کی ایران کے خلاف زیادہ سے زیادہ دباؤ ڈالنے کی پالیسی ناکامی سے دوچار ہوگی۔

ایران کے سرکاری ٹی وی کے مطابق آیت اللہ علی خامنہ ای نے کہا کہ ’’ایرانی حکام کبھی امریکا سے بات چیت نہیں کریں گے۔ ایران پر زیادہ سے زیادہ دباؤ ڈالنا امریکا کی پالیسی کا حصہ ہے مگر اس کی زیادہ سے زیادہ دباؤ ڈالنے کی پالیسی کامیاب نہیں ہوگی۔‘‘

ایرانی سپریم لیڈر تو امریکی حکام سے سرے سے مذاکرات ہی سے انکاری ہوگئے ہیں جبکہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سوموار کو ایک بیان میں کہا تھا کہ انھیں صدر حسن روحانی سے ملاقات میں کوئی مسئلہ نہیں ہوگا۔

اس سے ایک روز قبل وائٹ ہاؤس کی ایک مشیر کا کہنا تھا کہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے سالانہ اجلاس کے موقع پر دونوں صدور میں ملاقات کے امکان کو مسترد نہیں کیا جاسکتا۔