.

امریکا پابندیاں ختم کردے توجوہری سمجھوتے میں ’معمولی تبدیلیوں‘ کے لیے تیار ہیں:ایران

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران نے کہا ہے کہ اگرامریکا اس پر عاید اقتصادی پابندیاں ختم کردے تو وہ اس کے بدلے میں جوہری ہتھیاروں کے حصول سے دستبرداری اور 2015ء میں چھے عالمی طاقتوں کے ساتھ طے شدہ جوہری سمجھوتے میں ’’معمولی تبدیلیوں‘‘ کے لیے تیار ہے۔

ایران کےسرکاری ٹی وی کے مطابق حکومت کے ترجمان علی ربیع نے بدھ کے روز یہ پیش کش کی ہے۔ انھوں نے کہا کہ ’’اگر پابندیاں ختم کردی جاتی ہیں تو پھرجوہری سمجھوتے پر نظرثانی کی جاسکتی ہے۔تعطل کے خاتمے کے لیے یقین دہانیاں کرانے کی گنجائش موجود ہے۔حتیٰ کہ صدر ( حسن روحانی) نے جوہری سمجھوتے میں معمولی ترامیم کی بھی تجویز پیش کی ہے۔‘‘