.

امریکا سعودی عرب میں پیٹریاٹ بیٹری نصب اور 200معاون اہلکار تعینات کرے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا نے سعودی آرامکو کی تنصیبات پر حالیہ ڈرون حملوں کے ردعمل میں مملکت میں ایک پیٹریاٹ بیٹری ، چار سینٹی نل راڈار نصب کرنے اور قریباً 200 معاون اہلکاروں کو تعینات کرنے کا اعلان کیا ہے۔امریکا کے محکمہ دفاع نے ایک بیان میں اس فیصلے کی تصدیق کی ہے۔

پینٹاگان کے ترجمان اعلیٰ جوناتھن ہوفمین نے جمعرات کو جاری کردہ اس بیان میں کہا ہے کہ ’’سعودی عرب میں حالیہ حملوں کی روشنی میں اور ان کی دعوت پر وزیر دفاع مارک ٹی ایسپر آج یہ اعلان کرتے ہیں کہ امریکا مملکت میں درج ذیل آلات نصب کرے گا:ایک پیٹریاٹ بیٹری اور چار سینٹی نل راڈار۔ اس کے علاوہ قریباً 200 معاون اہلکار تعینات کرے گا۔‘‘

انھوں نے کہا کہ ’’ اس تنصیب اور تعیناتی سے سعودی عرب کے اہم عسکری اور سول ڈھانچے کے فضائی اور میزائل دفاع کو تقویت ملے گی۔اس سے خطے میں پہلے سے موجود امریکی فورسز کو بھی نمایاں تقویت ملے گی۔‘‘

امریکا نے 14 ستمبر کو سعودی آرامکو کی دو تنصیبات پر ڈرون حملوں کے بعد گذشتہ جمعہ کو سعودی عرب میں مزید فورسز تعینات کرنے کا اعلان کیا تھا۔اب پینٹاگان کے نئے بیان سے امریکی فورسز کی تعیناتی کی بھی وضاحت ہوگئی ہے۔

امریکی وزیر دفاع ایسپر نے اضافی فورسز کو تعیناتی کے لیے تیار رہنے کے حکم ( پی ٹی ڈی او) کی بھی منظوری دے دی ہے۔تاہم ہوفمین نے وضاحت کی ہے کہ ان اضافی فورسز کی تعیناتی کا ابھی کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے۔البتہ وہ تیاری کی حالت میں رہیں گی اور انھیں کسی بھی وقت بلایا جاسکتا ہے۔

اس پی ٹی ڈی او حکم کے تحت دو پیٹریاٹ بیٹریاں اور تھاڈ دفاعی نظام’’ ٹرمینل ہائی آلٹی ٹیوڈ ایریا ڈیفنس نظام‘‘ ( تھاڈ) کو بھی تنصیب کے لیے تیار رکھنے کا حکم دیا گیا ہے۔