.

شمالی ہندوستان میں بارشوں نے تباہی پھیلا دی، سیلاب میں 44 لقمہ اجل بن گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شمالی بھارت ميں ہونے والی شديد بارشوں کے باعث 44 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہو گئے۔

مسلسل ہونے والی بارشوں کے باعث شمالی بھارت میں دو ڈیم ٹوٹ گئے جس کی وجہ سے پانی کا ریلہ رہائشی علاقوں میں داخل ہو گیا جس سے بڑے پیمانے پر تباہی پھیلی ہے۔ ہزاروں لوگ بے گھر اور 44 افراد ہلاک ہو گئے۔ رواں ہفتے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 59 ہو گئی۔

قدرتی آفات سے نمٹنے والے ادارے کی ترجمان نے غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کو بتایا کہ ریاست اتر پردیش میں سب سے زیادہ نقصان ہوا ہے جہاں سے گزرنے والے دو دریاؤں میں طغیانی آئی اور مسلسل بارشوں سے ڈیم بھی ٹوٹ گئے جس کے باعث اردگرد کے علاقے زیر آب آ گئے۔

حکومت کی جانب سے ریلیف کیمپ قائم کر دیئے گئے ہیں جہاں ریسکیو اداروں کی مدد سے ہزاروں شہریوں کو منتقل کیا گیا ہے. ریلیف کیمپ میں طبی سہولیات بھی فراہم کی گئی ہیں تاہم خوراک اور پینے کے پانی کی قلت کا سامنا ہے۔ امدادی کاموں میں بھارتی فوج بھی حصہ لے رہی ہے۔

واضح رہے کہ رواں برس شروع ہونے والا مون سون بارشوں کا سلسلہ تاحال اپنی تمام تر تباہیوں کے ساتھ جاری ہے جس کے دوران بھارت کے علاوہ نیپال اور بنگلہ دیش میں سیکڑوں ہلاکتیں ہوئی ہیں۔