.

ترکی کے بیرونی قرضوں کا حجم جست لگا کر 447 ارب ڈالر ہو گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی کی وزارت خزانہ کی جانب سے جمعرات کے روز جاری بیان میں انکشاف کیا گیا ہے کہ رواں سال جون کے اختتام تک ترکی کے بیرونی قرضوں کا مجموعی حجم 446.9 ارب ڈالر تک پہنچ گیا۔

بیان کے مطابق ترکی کے بیرونی قرضوں کا مجموعی حجم قومی آمدن کا 61.9% ہو گیا ہے جب کہ ان میں خالص قرضوں کا حجم قومی آمدن کا 37.2% بنتا ہے۔

رواں سال کے پہلے چھ ماہ کے دوران حکومتی سیکٹر کے خالص بیرونی قرضے 103 ارب ڈالر رہے جن میں ترکی کی وزارت خزانہ کے قرضوں کا حجم تقریبا 14.7 ارب ڈالر ہے۔

ترکی کی وزارت خزانہ نے منگل کے روز انکشاف کیا تھا کہ اکتوبر اور نومبر کے درمیانی عرصے میں اندرونی قرضوں میں اضافے کی توقع ہے۔

رواں سال کی دوسری سہ ماہی کے دوران ترکی کی معیشت میں 1.5% کا سکڑاؤ ریکارڈ کیا گیا۔ یہ سالانہ بنیاد پر مسلسل تیسری سہ ماہی ہے جس میں معیشت میں سکڑاؤ دیکھنے میں آیا۔ ستمبر کے اواخر میں بین الاقوامی مالیاتی فنڈ IMF نے خبردار کیا تھا کہ اگر ترکی کی حکومت نے مزید اصلاحات پر عمل درامد نہ کیا تو ایک مضبوط اور دیرپا نمو کو یقینی بنانا مشکل ہو جائے گا۔