.

صدرپوتین کے سعودی عرب کے دورے سے قبل روس کے خودمختار فنڈ کے دفتر کا افتتاح

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روس کے خود مختار دولت فنڈ (روسی ڈائریکٹ انویسٹمنٹ فنڈ، آر ڈی آئی ایف) نے صدر ولادی میر پوتین کے الریاض کے متوقع دورے سے قبل سعودی عرب میں اپنا ایک دفتر کھول لیا ہے۔

روس کا یہ دفتر سعودی عرب میں خودمختار سرمایہ کاری فنڈ کی سرگرمیوں کی نگرانی کرے گا اور انھیں انجام دے گا۔اس فنڈ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ( سی ای او) کیریل دمتریف کا کہنا ہے کہ ’’اس دفتر سے ہماری دوطرفہ شراکت داری میں اضافہ ہوگا اور یہ ہمارے درمیان باہمی مفاد کے لیے تعاون کا بھی مظہر ہے۔‘‘

انھوں نے کہا کہ ’’ہم موجودہ منصوبوں کو ترقی دینے کی توقع کرتے ہیں،اس کے علاوہ ہم مشترکہ سرمایہ کاری کے لیے پُرکشش نئی صنعتوں کی تلاش کریں گے اور ہم ایک دوسرے کی کمپنیوں کی دونوں ملکوں کی مارکیٹوں میں رسائی کے لیے مکمل معاونت کریں گے۔‘‘

ان کا کہنا تھا کہ آر ڈی آئی ایف روس کا سرمایہ کاری کا پہلا ادارہ ہے جو سعودی عرب میں اپنا دفتر کھول رہا ہے۔

یہ فنڈ روس اور سعودی عرب کے درمیان ثقافتی تبادلے کی سرگرمیاں بھی انجام دے گااور اس شعبے میں دوطرفہ تعاون کے فروغ میں کردار ادا کرے گا۔

روس اور سعودی عرب نے اب تک مختلف شعبوں میں ڈھائی ارب ڈالر مالیت کے دوطرفہ منصوبوں کی منظوری دی ہے یا ان کے لیے سرمایہ مہیا کیا ہے،ان میں مصنوعی ذہانت ، انفرااسٹرکچر، ٹرانسپورٹ اور ادویہ سازی کے شعبے شامل ہیں۔

سعودی آرامکو اور روسی سرمایہ کاری فنڈ تیل کی خدمات کے شعبے میں ایک ارب ڈالر مالیت کے ایک مشترکہ منصوبے پربات چیت کررہے ہیں۔اس کے علاوہ وہ تیل اور گیس کی تبدیلی کا دو ارب ڈالر مالیت کا ایک اور منصوبہ شروع کرنے پر بھی غور کررہے ہیں۔