.

کھانے میں بال نکل آنے پر شوہر نے بیوی کا سرمونڈ ڈالا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بنگلہ دیش میں ایک شخص نے کھانےمیں بال آنے پربیوی کا سرزبردستی مونڈ ڈالا۔ پولیس نے بیوی سے بدسلوک کرنے والے شخص کوحراست میں لے کراس کے خلاف قانونی کارروائی شروع کردی ہے۔ جرم ثابت ہونے پر اسے 14 سال قید کی سزا ہوسکتی ہے۔

ڈھاکا پولیس نے منگل کو بتایا کہ ایک بنگلہ دیشی شخص جس نے اپنی بیوی کا سر منڈوایا ہے کو گرفتارکرلیا گیا ہے۔ دوسری جانب انسانی حقوق کی تنظیموں نے اس واقعے کو بنگلہ دیش میں خواتین سے بدسلوکی بدترین شکل قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ بنگلہ دیش کے معاشرے میں عورتوں پر تشدد بڑھ رہا ہے۔

پولیس نے شمالی مغربی علاقے جوئےپورہٹ سے 35 سالہ پابلو مینڈل کو حراست میں لیا ہے۔ اسے مقامی شہریوں اور ہمسائیوں کی شکایت پر پکڑا گیا ہے۔ مقامی شہریوں نے پولیس کوشکایت کی تھی کہ مینڈل نے کھانے میں بال نکلنے کی شکایت پربیوی کا سرمنڈوا دیا تھا۔

شہریار خان نامی پولیس اہلکار نے بتایا اس شخص کو چاول اور دودھ کے کھانے پرایک انسانی بال ملا گیا۔ یہ کھانا اس کی بیوی نے بنایا تھا۔ وہ اس پرسخت برہم ہوا اور اس نے بیوی پر کھانا بنانے میں لاپرواہی کا الزام عاید کیا اور اس کے بعد اس کا سرمنڈوا دیا۔

بنگلہ دیش میں خواتین سے بدسلوکی اور تشدد کی روک تھام کے لیے سخت قوانین کے باوجود گھریلو تشدد کے واقعات میں کمی نہیں آسکی۔ جرم ثابت ہونے کی صورت میں بیوی کا سرمنڈوانے والے شوہر کو 14 سال تک جیل ہوسکتی ہے جب کہ بیوی کی توہین کے جرم کی 23 سال قید کی سزا ہے۔

انسانی حقوق کارکنوں کا کہنا تھا کہ اس واقعہ سے بنگلہ دیش میں خواتین کے جسمانی اور جنسی استحصال کا پتا چلتا ہے۔ لگتا ہے کہ ملک میں قوانین ہونے کے باوجود خواتین عدم تحفظ کا شکار ہیں۔