.

ترکی کی شام میں کارروائی سے داعش کے جنگجوؤں کو فرارکا موقع مل گیا:روسی وزیرخارجہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روسی وزیر خارجہ سرگئی لاروف نے کہا ہے کہ شام کے شمال مشرقی علاقے میں ترکی کی جارحانہ فوجی کارروائی سے داعش کے گرفتار جنگجوؤں کو فرار کا موقع مل گیا ہے۔

روسی خبررساں ایجنسی ریا کے مطابق وزیر خارجہ نے بدھ کو ساحلی سیاحتی شہر سوچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ روس ترکی کی اس فوجی کارروائی کے بعد شامی حکومت اور کرد فورسز کے درمیان سمجھوتے طے پانے اور پھر ان کے نفاذ کی حوصلہ افزائی کرے گا۔

انھوں نے واضح کیا کہ روس ترکی اور شام کے درمیان واقع سرحدی علاقے میں دونوں ملکوں کی فوجوں میں سکیورٹی تعاون کی حمایت کرے گا۔

شمالی شام میں کرد انتظامیہ کا کہنا ہے کہ شمالی قصبے عین عیسیٰ میں واقع کیمپ کے نزدیک ترک فوج کی بمباری کے نتیجے میں داعش کے ارکان کے 785 رشتے دار فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔ ان میں داعش کی خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔بعض اطلاعات کے مطابق کرد فورسز کے زیر انتظام ایک جیل سے داعش کے سیکڑوں جنگجو فرار ہوگئے ہیں۔