.

شام میں داعش کے ایک سو سے زیادہ قیدی فرار ہوگئے : امریکی ایلچی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کے خصوصی ایلچی برائے شام جیمز جیفرے نے کہا ہے کہ شام کے شمال مشرقی علاقے میں ترکی کی حالیہ فوجی کارروائی کے دوران میں سخت گیر انتہا پسند گروپ داعش کے ایک سو سے زیادہ قیدی فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔

وہ امریکی ایوان نمایندگان کی خارجہ امور کمیٹی کے روبرو بیان دے رہے تھے۔ان سے داعش کے قیدیوں کے بارے میں سوال پوچھا گیا تھا۔اس پر انھوں نے کہا کہ ’’اب ہم یہ کہہ سکتے ہیں،فرارہونےوالوں کی تعداد ایک سو سے زیادہ ہے۔‘‘

دریں اثناء امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے روس اور ترکی کے درمیان سوچی میں منگل کے روز شام کے سرحدی علاقے سے کرد جنگجوؤں کو ہٹانے کے لیے طے پانے والے سمجھوتے کو سراہا ہے اور اس سمجھوتے کو ایک بڑی کامیابی قرار دیا ہے۔

انھوں نے بدھ کو ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ ’’ترکی،شام سرحد پر ایک بڑی کامیابی ملی ہے، ایک محفوظ زون قائم ہوگیا۔فائربندی جاری ہے اور لڑاکا مشنوں کا خاتمہ ہوگیا ہے۔‘‘

وہ مزید لکھتے ہیں’’ کرد محفوظ ہیں۔ انھوں نے ہمارے ساتھ بڑے اچھے طریقے سے کام کیا ہے۔پکڑے گئے داعش کے قیدیوں کو بھی محفوظ ( جیل بند) کر لیا گیا ہے۔‘‘