.

یمنی فوج نے حوثیوں کی مغربی ساحل پر بچھائی 3 ہزار بارودی سرنگیں تلف کردیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کی سرکاری فوج نے ملک کے مغربی ساحل کے تین علاقوں سے حالہ ایام میں تلاش کے بعد جمع کی گئی 3 ہزار بارودی سرنگیں کل ہفتے کو تلف کردیں۔

یہ بارودی سرنگیں ایرانی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا کی طرف سے انسانیت کی تباہی کے لیے ان علاقوں میں بچھائی گئی تھیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ہفتے کے روز یمنی مشترکہ فوج کی انجینئرنگ ٹیموں نے 3،000 بارودی سرنگیں اور ایک دیسی ساختہ دھماکا خیز آلات تباہ کیے۔

ایک فوجی ذرائع نے بتایا کہ مغربی ساحل سے انجینئرنگ ٹیموں نے 3،000 بارودی سرنگیں جمع کیں۔ جنھیں حوثی ملیشیا نے ان علاقوں کو آزاد کرنے سے قبل الوازعیہ اور یختل گورنریوں میں نصب کیا تھا۔

ذرائع نے بتایا کہ تباہ کی گئی بارودی سرنگوں میں 500 باردوی سرنگیوں انسانوں کو نقصان پہنچانے اور 2500 گاڑیوں کو تباہ کرنے کے لیے نصب کی گئی تھیں۔

یہ امر قابل ذکر ہے کہ یمنی فوج نے حالیہ عرصے کے دوران مغربی ساحل پر متعدد رہائشی اور زرعی علاقوں میں حوثی ملیشیا کے ہاتھوں بچھائی گئی ہزاروں بارودی سرنگیں اور بارودی مواد کو نکال کر ان علاقوں کو محفوظ بنایا۔

ایرانی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا نے مغربی ساحل کو دنیا کا سب سے بڑا بارودی سرنگ بنا دیا تھا۔ یہ بارودی سرنگیں مقامی آبادی کے لیے بہت بڑے خوف کا باعث ہیں۔

حوثی بارودی سرنگیں الحدیدہ اور مغربی تعز کے جنوب میں واقع سیکڑوں شہریوں جن میں زیادہ تر خواتین اور بچے شامل ہیں کی اموات کا باعث بنی ہیں۔