.

لیبیا : حفتر کی فوج کے ہاتھوں مصراتہ میں ڈرون طیاروں کا اڈا تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبیا میں (فیلڈ مارشل خلیفہ حفتر کی) فوج کا کہنا ہے کہ اس کے لڑاکا طیاروں نے مصراتہ میں ایئرفورس اکیڈمی کے مختلف ٹھکانوں کو نشانہ بنایا۔ اس دوران ایک فضائی اڈے کو تباہ کر دیا گیا جو ڈرون طیاروں کی تیاری اور ان کو ذخیرہ کرنے کے واسطے استعمال ہو رہا تھا۔

بدھ کی شب جاری ایک بیان میں واضح کیا گیا ہے کہ فوج کے زیر انتظام انٹلی جنس نے ایئرفورس اکیڈمی کے اندر مختلف مقامات کا پتہ چلایا تھا۔ یہ مقامات سنگین خطرے کی صورت اختیار کر گئے تھے جہاں سے ڈرون طیارے اڑان بھرتے تھے۔ بیان کے مطابق لڑاکا طیاروں کے حملوں نے پوری درستی کے ساتھ اپنے اہداف کو حاصل کیا۔ طیاروں نے استعمال میں آنے والی مذکورہ جگہاؤں کو 100% تباہ کر ڈالا اور بحفاظت اپنے اڈوں پر واپس آ گئے۔

دوسری جانب لیبیا کی فوج کی فضائیہ نے دارالحکومت طرابلس کے علاقے العزیزیہ میں وفاق کی حکومتی فورسز کے ٹھکانوں پر کئی حملے کیے۔

صورت حال کے حوالے سے لیبیا فوج کی جنرل کمان کے سرکاری ترجمان احمد المسماری کا کہنا ہے کہ طرابلس کے وسطی علاقے کی سمت فوج کی پیش رفت کے سامنے وفاق کی حکومتی فورسز کے قدم ڈگمگاہٹ کا شکار ہیں۔ انہوں نے یہ بات بدھ کے روز ایک پریس کانفرنس کے دوران کہی۔