.

اہوازی شائقین کی فٹ بال میچ کے دوران میں عربوں کے حق میں نعرے بازی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران کے جنوب مغربی صوبہ خوزستان میں اہوازی شائقین نے ایک فٹ بال میچ کے دوران میں عربوں کے حق میں نعرے بازی کی ہے اور ایرانی حکومت کو مخاطب کر کے کہا’’ تہران سنو! ہم عرب ہیں۔‘‘

یہ فٹ بال میچ خوزستان میں فولاد ایرینا اسٹیڈیم میں فولاد اور پرسی پولیس کی ٹیموں کے درمیان چار نومبر کو کھیلا گیا تھا۔اہوازی شائقین کی نعرے بازی کی ایک ویڈیو انٹرنیٹ پر پوسٹ کی گئی ہے۔اس میں اجتماع میں موجود ایک شائق کو یہ نعرے لگاتے ہوئے سنا جاسکتا ہے:’’تہران سنو! عرب زندہ باد ، میں ایک عرب ہوں ، تم بھی ایک عرب ہو ،اہواز عرب ہے۔‘‘

ٹویٹر پر پوسٹ کی گئی دوسری ویڈیوز میں ایرانیوں کو عراقی مظاہرین کے حق میں نعرے بازی کرتے ہوئے سنا جاسکتا ہے۔ایک قطار میں بیٹھے شائقین نے عراقی پرچم تھام رکھے تھے اور ان کے نیچے ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای کی تصویر والا پوسٹر پڑا ہوا تھا۔

واضح رہے کہ ایران کے جنوب مغرب میں آباد عرب اقلیت ایک عرصے سے تہران کی مرکزی حکومت کے امتیاز اور ناروا سلوک کی شکایات کررہی ہے۔

گذشتہ سال اہواز اور خوزستان کے دوسرے شہروں کے مکینوں نے بھی ملک گیر حکومت مخالف احتجاجی مظاہروں میں حصہ لیا تھا۔

تب انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل نے یہ اطلاع دی تھی کہ حکام نے مظاہرین کے خلاف کریک ڈاؤن کی کارروائیوں میں سات ہزار سے زیادہ افراد کو گرفتار کر لیا ہے۔ ان میں صحافی ، سیاسی کارکنان ، طلبہ ، انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے کارکنان ،وکلاء ،خواتین اور ٹریڈ یونینوں کے عہدے دار شامل تھے۔انھوں نے احتجاجی مظاہرین کی گرفتاریوں پر اس سال کو ایران کے لیے ’شرم ناک‘قرار دیا تھا۔