.

سعودی عرب نے غزہ پراسرائیل کے فضائی حملوں کی مذمت کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی وزارتی کونسل نے غزہ پر اسرائیل کے حالیہ فضائی حملوں کی مذمت کردی ہے اور کہا ہے کہ یہ فضائی حملے بین الاقوامی قانون اور سمجھوتوں کی خلاف ورزی ہیں۔

سعودی پریس ایجنسی (ایس پی اے) کے مطابق وزارتی کونسل نے منگل کے روز ایک بیان میں مملکت کے اس موقف کا اعادہ کیا ہے کہ ’’عالمی برادری فلسطینی عوام کو اسرائیلی جارحیت سے تحفظ مہیا کرنے کے لیے اپنی ذمے داری کو پورا کرے اوراسرائیل کی بین الاقوامی قانون کی خلاف ورزیوں کو رکوائے۔‘‘

اسرائیلی فوج نے گذشتہ منگل کو غزہ پر فضائی حملے میں فلسطینی مزاحمتی تنظیم جہادِ اسلامی کے ایک سرکردہ کمانڈر کو شہید کردیا تھا۔اس کے جواب میں غزہ سے اسرائیل کی جانب بیسیوں راکٹ فائر کیے گئے تھے۔

اسرائیل کے غزہ پر فضائی حملوں میں چونتیس فلسطینی شہید اور بیسیوں زخمی ہوگئے تھے۔ اسرائیلی فوج نے یہ دعویٰ کیا تھا کہ اس نے فلسطینی علاقے میں جہادِ اسلامی کے ٹھکانوں اور راکٹ چھوڑنے کی جگہوں کو فضائی بمباری میں نشانہ بنایا ہے۔ اس کا کہنا تھا کہ غزہ سے اسرائیلی علاقوں کی جانب قریباً ساڑھے چار سو راکٹ فائر کیے گئے تھے۔

تاہم مصر کی ثالثی میں گذشتہ جمعرات کو اسرائیل اور جہادِ اسلامی کے درمیان جنگ بندی ہوگئی تھی لیکن اس کے بعد بھی صہیونی فوج نے فضائی حملے جاری رکھے ہیں اور غزہ سے مزاحمتی تنظیموں نے اسرائیل کے جنوبی اور وسطی علاقوں کی جانب راکٹ فائر کیے ہیں۔