.

گروپ 20 کی صدارت باضابطہ طور پر جاپان سے سعودی عرب کے حوالے!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان کو جاپان کے وزیر خارجہ توشی مِٹسو موٹیجی نے نیگویا میں منعقدہ ایک تقریب میں گروپ 20 کی صدارت کاعلامتی نشان باضابطہ طور پرحوالے کردیا ہے۔گروپ 20 کا 2020ء میں سربراہ اجلاس سعودی دارالحکومت الریاض میں منعقد ہوگا۔

شہزادہ فیصل جمعہ کو جاپان پہنچے تھے۔انھوں نے گروپ 20 کے وزرائے خارجہ کے دوروزہ اجلاس میں شرکت کی ہے۔اس میں آزاد تجارت ،پائیدار ترقی اور افریقا کی تیزی سے ترقی کرتی معیشتوں کی امداد سے متعلق امور پر غور کیا گیا ہے۔یہ جاپان میں منعقد ہونے والے گروپ کے آٹھ وزارتی اجلاسوں کا اس سال آخری اجلاس تھا۔

سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر لکھا ہے:''خادم الحرمین الشریفین اور ولی عہد کی رہ نمائی میں ، میں نے آج گروپ 20 کی 2020ء کے لیے صدارت حاصل کر لی ہے۔یہ پورا سال امید اور کام ،ابلاغ اور مکالمے کا سال ہوگا جہاں لوگوں کو پائیدار ترقی میں مرکزی حیثیت حاصل ہوگی اور وہ آج کی ٹیکنالوجی سے فائدہ اٹھانے والے ہوں گے۔ سعودی عرب میں خوش آمدید۔''

شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے مملکت کے گروپ بیس کی صدارت کے لیے انتخاب کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ یہ اس کے عالمی معیشت میں بنیادی کردار کا ثبوت ہے۔

جاپانی وزارت خارجہ کی جانبسے جاری کردہ ایک بیان کے مطابق وزیر خارجہ توشی مٹسو موٹیجی نے سعودی ہم منصب سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ’’انھیں ان سے پہلی مرتبہ مل کر خوشی ہوئی ہے۔دونوں فریق اپنے دوطرفہ تعلقات کو فروغ دینا چاہتے ہیں۔‘‘

انھوں نے جنوبی یمن میں استحکام کے لیے سعودی عرب کے کردار کو سراہا۔سعودی عرب کی ثالثی کی کوششوں کے نتیجے میں یمنی حکومت اور جنوبی عبوری کونسل کے درمیان الریاض میں اس ماہ کے اوائل میں ایک سمجھوتا طے پایا تھا۔

سفارت کاروں کے مطابق آیندہ سال کے دوران میں سعودی عرب میں گروپ بیس کے رکن ممالک کے دس، پندرہ وزارتی اجلاس منعقد ہوں گے۔ان میں سیاحت ، زراعت ، توانائی ، ماحول اور ڈیجیٹل معیشت کے شعبوں میں رکن ممالک کے درمیان باہمی تعاون اور روابط کے فروغ سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

دنیا کی بیس بڑی معیشتوں کا دوروزہ سربراہ اجلاس الریاض میں 21 اور 22 نومبر2020ء کو منعقد ہوگا۔ کسی عرب ملک میں اس گروپ کا یہ پہلا سربراہ اجلاس ہوگا۔