.

ٹرمپ کی انتخابات میں مداخلت پر روس کو سخت وارننگ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

وائٹ ہاؤس نے اعلان کیا کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے منگل کے روز روسی وزیر خارجہ سیرگی لاوروف سے ملاقات کے دوران ماسکو کو متنبہ کیا کہ آئندہ امریکی صدارتی انتخابات میں اس کی مداخلت خطرناک ہوگی۔

امریکی صدر نے ٹرمپ اور لاوروف کے مابین اوول آفس میں منعقدہ اجلاس کے اختتام پر جاری کردہ ایک بیان میں کہا کہ امریکی انتخابات میں روس کی مداخلت کی کسی بھی کوشش کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے روس پر زور دیا کہ وہ یوکرائن کا تنازع پرامن طریقے سے حل کرے۔دوسری طرف روسی وزیر خارجہ سیرگی لاوروف نےکہا ہے کہ امریکی صدر کے ساتھ بند کمرہ اجلاس میں امریکی انتخابات میں روسی مداخلت سے متعلق کسی معاملے پربات چیت نہیں کی گئی۔

لاوروف نے ٹرمپ سے ملاقات کے بعد واشنگٹن میں پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ حقیقت میں ہم نے انتخابات کے بارے میں بھی بات نہیں کی ہے۔

لاوروف کا انکار وائٹ ہاؤس کے اعلان کے فورا بعد سامنے آیا۔ جب کہ وائٹ ہائوس کا کہنا ہے کہ صدر ٹرمپ نے روسی وزیر خارجہ کو خبردار کیا ہے کہ ماسکو آئندہ سال ہونے والے صدارتی انتخابات میں کسی قسم کی مداخلت نہیں کرے گا۔

منگل کے روزامریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے اپنے روسی ہم منصب ، سرگئی لاوروف کو 2020 میں ہونے والے امریکی صدارتی انتخابات میں کسی مداخلت سے خبردار کیا تھا۔

پومپیو نے واشنگٹن میں لاوروف کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس میں کہا کہ میں نے روس سے واضح طور پر اس کی توقع کی ہے۔ اگر روس یا کوئی غیر ملکی گروپ ہمارے جمہوری عمل کو خراب کرنے کے لیے اقدامات کرتا ہے تو ہم اس کا جواب دیں گے۔