.

سعودی عرب:2019ء کی تیسری سہ ماہی میں بے روزگاری کی شرح کم ہو کر 12 فی صد رہ گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں بے روزگاری کی شرح میں گذشتہ تین سال کے دوران میں پہلی مرتبہ نمایاں کمی واقع ہوئی ہے اور سعودی شہریوں میں 2019ء کی تیسری سہ ماہی میں بے روزگاری کی شرح گذشتہ تین ماہ میں مزید کم ہوکر 12 فی صد ہوگئی ہے۔

سعودی عرب کے محکمہ شماریات کے اتوار کو جاری کردہ اعداد وشمار کے مطابق سعودی شہریوں میں رواں سال کی دوسری سہ ماہی میں بے روزگاری کی شرح 12۰3 فی صد تھی جبکہ 2018ء میں بے روزگاری کی شرح 12۰9 فی صد تھی۔

اس سہ ماہی کے اعداد وشمار سے ظاہر ہوتا ہے کہ سرکاری اور نجی شعبوں میں اب پہلے سے زیادہ سعودی شہری برسر روزگار ہیں اور مرد وخواتین دونوں میں بے روزگاری کی شرح میں کمی واقع ہوئی ہے۔

تاہم نجی شعبے میں سالانہ کی بنیاد پر ملازمتوں میں بدستور کمی واقع ہورہی ہے۔2018ء کے اسی عرصے کے مقابلے میں اس سال نجی شعبے میں کام کرنے والے سعودیوں کی تعداد میں 2۰8 فی صد کمی واقع ہوئی ہے جبکہ غیر ملکی ورکروں کی ملازمتوں کی شرح میں 8۰5 فی صد کمی ہوگئی ہے۔