سلامتی کونسل : شام کے لیے امداد سے متعلق قرار داد کے خلاف روس اور چین کا ویٹو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

روس نے ایک بار پھر ترکی اور عراق کی سرحدوں کے ذریعے کروڑوں شامی شہریوں کو انسانی امداد پہنچانے سے متعلق سلامتی کونسل کی قرار داد کو ویٹو کر دیا ہے۔ جمعے کے روز قرار داد کی مخالفت میں روس کو چین کی سپورٹ حاصل رہی۔ سال 2011 میں شام کا بحران شروع ہونے کے بعد سے یہ 14 واں موقع ہے جب روس نے ویٹو کا حق استعمال کرتے ہوئے اس مقصد سے پیش کی گئی قرار داد کو روک دیا۔

بیلجیم، کویت اور جرمنی کی جانب سے پیش کی گئی قرار داد کے مطابق ترکی میں دو اور عراق میں ایک مقام سے مزید ایک سال کی مدت کے لیے سرحد کے ذریعے انسانی امداد منتقل کرنے کی اجازت ہو گی۔ تاہم بشار حکومت کے حلیف روس نے ترکی کے دو مقامات سے صرف چھ ماہ کے لیے امداد کی منتقلی پر آمادگی کا اظہار کیا۔

جمعے کے روز سلامتی کونسل میں پیش کی گئی قرار داد کی تائید میں 13 ارکان نے ووٹ دیا جب کہ بقیہ دو ارکان روس اور چین نے اپنا ویٹو کا حق استعمال کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں